مارچ میں پی ڈی ایم عمران حکومت کو کیا سرپرائز دینے والی ہے ؟

اسلام آباد (ویب ڈیسک)متحدہ حزب اختلاف کے پی ڈی ایم کی حکومت کو 31 جنوری تک مستعفی ہونے کے الٹی میٹم کی ڈیڈ لائن عبور ہوگئی ہے،متحدہ حزب اختلاف کو حکومت کے خلاف تحریک کا دُوسرا مرحلہ شروع کرنا ہے اس بارے میں قدم کامل اتفاق رائے سے ہی اُٹھایا جانا چاہئے

جس کے لئے مشاورتی عمل اختتام ہفتہ مکمل ہو جائے گا۔ملک کے مختلف حصوں میں قومی و صوبائی اسمبلیوں کے ضمنی انتخابات آئندہ دو اڑھائی ہفتوں میں مکمل ہو جائیں گے جس کے بعد سینیٹ کے انتخابات ہوں گے جن کی تکمیل کے ساتھ ہی فیصلہ کن معرکہ آرائی کا موسم شروع ہو جائے گا۔ امکان غالب ہے کہ مارچ کے مہینے میں بھی پی ڈی ایم کا لانگ مارچ اپنی بہار دکھائے گا۔ حکومت نے پانچ ہفتے میں تیسری مرتبہ پٹرول کے نرخوں میں ہوشربا اضافہ کردیا،اسے عوام کے ساتھ مجرمانہ مذاق ہی کہا جائے گا کہ وزیراعظم سہ پہر کو پیغام دیتے ہیں کہ مہنگائی کم ترین سطح پر آ گئی ہے اور اس کے چند گھنٹوں بعد پٹرول اور دیگر مصنوعات کے نرخ بڑھا دینے کا رُوح فرساسرکاری اعلان جاری کر دیا جاتا ہے۔ چین سے کورونا ویکسین موصول ہونے کا عمل شروع ہوا، دو وفاقی وزراء اب اسد عمر اور شاہ محمود قریشی کے درمیان اس کا کریڈٹ حاصل کرنے کے لئے مقابلہ آرائی شروع ہوگئی۔

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *