مانسہرہ افسوسناک اطلاعات

مانسہرہ( ویب ڈیسک)ڈی پی او مانسہرہ آصف بہادر نے غیر اخلاقی ویڈیو سکینڈل میں ایس ایچ او تھانہ گڑھی حبیب اللہ کو معطل کرکے قاضی واجد نسیم کو ایس ایج او تعینات کر دیا ،پسند کی شادی پر لڑکے کے ساتھ درندگی،ویڈیو بھی وائرل کردی۔ لڑ کی کی ورثا ء نے بے لباس کرکے زدوکوب کیا

اور ویڈ یوبنا ئی ، واجد نسیم نیا ایس ایچ او تعینا ت کردیا گیا ، اس بارے میں پولیس تھانہ گڑھی کے مطابق بوئی کے رہائشی اجمل ایک ماہ قبل شادی شدہ عورت کو لے گیا جس پر لڑکی کے ورثاء نے لڑکی کو تلاش کر کے عدالت میں پیش کیا جہاں لڑکی نے عدالت میں بیان دیتے ہوئے کہا کہ اجمل مجھے زبر دستی اپنے ساتھ لے کر گیا جس پر تھانہ گڑھی حبیب اللہ نے اجمل کے خلاف ایف آئی آر درج کر کے اجمل کے گھر پر ریڈ کیا تو پولیس اجمل کو گرفتار نہ کر سکی دوسرے دن اجمل کو لڑکی کے ورثا نے پکڑ لیا اور مویشیوں کے باڑے میں بے لباس کر کے درندگی کا مظاہرہ کیا اور دوسرے روز صبح اجمل کو تھانہ گڑھی حبیب اللہ کے حوالے کرتے کہا کہ اجمل رات کو ہمارے گھر میں داخل ہوا تو ہم نے اس کو پکڑ لیا جس پر پولیس نے اجمل کے خلاف پرچہ درج کر کے پابند سلاسل کر دیا تاہم سوشل میڈیا پر ویڈیو وائرل ہونے پر ڈی پی او مانسہرہ نے نوٹس لیتے ہوئے زخمی اجمل کا میڈیکل کروانے کے بعد ڈاکٹر کی رپورٹ پر چار ملزمان کے خلاف دفعہ 337کے تحت ہرچہ درج کرتے ہوئے ملزمان کو گرفتار کرنے کے احکامات جاری کرتے ہوئے نو تعینات ایس ایچ او کو جلد از جلد ملزمان کو گرفتار کرنے کے احکامات جاری کر دیے جبکہ ملزمان نامعلوم مقام پر روپوش ہوگئے ہیں۔واقعہ نے پورے شہر کو حیران کر دیا ہے ۔

Comments are closed.