محکمہ موسمیات نے بتا دیا

کراچی(ویب ڈیسک) پاکستان کے جنوبی علاقوں میں مون سون سسٹم میں اب تک معمول سے 159؍ فیصد سے زیادہ بارش ہوئی ہے جبکہ صرف اگست کے مہینے میں ہی سندھ میں 247.8؍ ملی میٹر بارش ہوئی جو عام سے 362؍ فیصد زیادہ ہے ۔ محکمہ موسمیات نے بتایا ہے کہ کراچی میں

جولائی اور اگست میں فیصل بیس اور سرجانی ٹاؤن علاقوں میں 28؍ انچ (فیصل بیس 736ملی میٹر، سرجانی 721ملی میٹر) سے زیادہ بارش ہوئی۔ محکمہ موسمیات کے مطابق فیصل بیس میں رواں مون سون کے سیزن میں 736ملی میٹر بارش ہوئی جس میں صرف اگست میں 588 ملی میٹر ، سرجانی ٹاؤن 721 ملی میٹر ، اگست میں 604 ملی میٹر ، گلشن حدید 659 ملی میٹر ، ناظم آباد 570 ملی میٹر ، صدر 559ملی میٹر ، نارتھ کراچی 532 ملی میٹر ، لانڈھی 498ملی میٹر ، مسرور بیس 489ملی میٹر ، یونیورسٹی روڈ 471ملی میٹر ، ایئرپورٹ 468ملی میٹر ، کیماڑی 399اور جناح ٹرمینل میں رواں سیزن میں 364ملی میٹر بارش ہوئی۔ محکمہ موسمیات کے مطابق سندھ خاص طور پر کراچی میں غیر معمولی بارشوں سے موسمیاتی تبدیلیوں کا واضح مظہر ہے کیونکہ موجودہ مون سون سسٹم کے دوران بارش کا سبب بننے والے نظام کا 50؍ فیصد نظام پاکستان کے جنوبی علاقوں کی طرف چلا گیا اور یکم جولائی سے اگست تک انتہائی تیز بارش کا باعث بنا۔ عام طور پر 20؍ فیصد مون سون نظام پاکستان کے جنوب کی طرف بڑھتا ہے اوربقیہ 80؍ فیصد ملک کے شمالی علاقوں میں منتقل ہوتا ہے۔ محکمہ موسمیات کے مطابق کراچی جیسے شہروں میں بارش کی سب سے بھاری بارش سمیت موسم کے انتہائی اہم واقعات ، اس مون سون کے موسم میں 700 ملی میٹر سے زیادہ ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کراچی سمیت جنوبی پاکستان کی سمت واپس جانے والے نظاموں نے یہ ظاہر کیا کہ اس خطے کو آب و ہوا کی تبدیلی کے اثرات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ، جس کے نتیجے میں موسم کی شدید صورتحال ہوتی ہے۔

Sharing is caring!

Comments are closed.