مردوں کی شرٹس کے بٹن دائیں جانب اور خواتین کی شرٹوں پر بائیں جانب کیوں ہوتے ہیں ؟

نیویارک(ویب ڈیسک) مردوخواتین کے مغربی طرز کے لباس میں کچھ معمولی فرق ہی ہوتا ہے، جن میں سے ایک فرق شرٹس کے بٹنوں میں ہوتا ہے۔ آپ نے مشاہدہ کیا ہو گا کہ مردوں کی شرٹ کے بٹن دائیں طرف جبکہ خواتین کی شرٹ کے بٹن بائیں طرف لگے ہوتے ہیں۔ گزشتہ دنوں

ایک انٹرنیٹ صارف نے ایک ویب سائٹ پر اس فرق کی وجہ پوچھی تو صارفین نے کچھ ایسے جوابات دیئے کہ سن کر آپ دنگ رہ جائیں گے۔دی سن کے مطابق ایک صارف نے بتایا ہے کہ اس فرق کی ابتداءصدیوں قبل ہوئی جب مرد لڑائیاں لڑا کرتے تھے جبکہ خواتین گھر میں بچوں کی پرورش کیا کرتی تھیں۔اس صارف نے بتایا کہ مرد کو لڑائی کے دوران سیدھے ہاتھ سے تلوار چلاتے ہوئے اپنے دفاع میں گاہے شرٹ اتارنی پڑ جاتی تھی، لہٰذا اس کی شرٹ کے بٹن دائیں طرف رکھے گئے تاکہ وہ سیدھے ہاتھ سے تلوار چلاتے ہوئے بائیں ہاتھ سے آسانی سے شرٹ کے بٹن کھول سکے۔ اسی طرح خواتین عموماً بچہ اپنے بائیں ہاتھ میں اٹھاتی ہیں اور ان کا دایاں ہاتھ فارغ ہوتا ہے۔ لہٰذا ان کی شرٹس کے بٹن بائیں طرف لگانے شروع کیے گئے تاکہ وہ بچے کو دودھ پلانے کے لیے سیدھے ہاتھ سے آسانی سے بٹن کھول سکیں۔ ایک صارف کی طرف سے اس فرق کی یہ وجہ بیان کی گئی ہے کہ زمانہ قدیم میں جب لوگ گھوڑوں پر سفر کرتے تھے، خواتین گھوڑے پر ایک طرف ٹانگیں کرکے بیٹھا کرتی تھیں۔ چنانچہ ان کی شرٹس کے بٹن دائیں طرف ہونے کی وجہ سے شرٹس میں ہو ا بھر جاتی تھی، لہٰذا ان کی شرٹس کے بٹن الٹی طرف لگانے شروع کر دیئے گئے۔ایک صارف نے لکھا ہے کہ خواتین کی شرٹس پر بٹن الٹی طرف محض اس لیے لگانے شروع کیے گئے تاکہ مردوخواتین کی شرٹس میں فرق نمایاں ہو سکے۔ چونکہ مردوخواتین کی شرٹس کی کٹنگ میں فرق ہوتا تھا جو صرف پہننے پر ہی معلوم ہوتا تھا لہٰذا اکثر خریدار غلطی سے دوسری صنف کی شرٹ لے جاتے تھے، اس مسئلے سے نمٹنے کے لیے دونوں کی شرٹس کے بٹن الگ الگ سمت میں لگانے شروع کیے گئے تھے۔اس کے علاوہ بھی صارفین اس تھریڈ میں مردوخواتین کی شرٹس کے بٹن الگ اطراف میں لگانے کی کئی حیران کن توجیہات بیان کر رہے ہیں۔

Comments are closed.