مریم نواز کا وزیراعظم عمران خان کے نام حیران کن پیغام

گوجرانوالہ (ویب ڈیسک) مسلم لیگ ن کی رہنما مریم نواز شریف نے گوجرانوالہ میں پی ڈی ایم کے جلسے سے خطاب کرتے ہوئے موجودہ حکومت پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ ‘عمران خان آج تمام اداروں کے ایک صفحے پر ہونے کا کہتے ہیں، یاد رکھو صفحہ تبدیل ہوتے وقت نہیں لگتا۔’

بی بی سی کی ایک خصوصی رپورٹ کے مطابق ۔۔۔۔۔انھوں نے ملک میں مہنگائی اور بیروز گاری کے حوالے سے حکومت پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ ‘آج ملک میں معاشی بدحالی ہے، مہنگائی نے عوام کی کمر توڑ دی ہے اور میں آج عوام کا مقدمہ لے کر یہاں آئی ہوں۔’انھوں نے ملک میں گیس اور بجلی کے بحران کا ذمہ دار وزیر اعظم عمران کی حکومت کو قرار دیتے ہوئے کہا کہ ’آج ملک سے آٹا چینی دال غائب ہے اور حکمرانوں کو عوام کی فکر نہیں۔’مریم نواز نے حکومتی پالیسیوں پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ ملک میں ’آئین اور قانون کی پاسداری کرنے والی عدلیہ پر دباؤ اور میڈیا کو زبان بندی کا سامنا ہے۔’ان کا کہنا تھا کہ ’اب وقت آ گیا ہے کہ ملک میں عوام کے ووٹ سے حکومت آنی چاہیے اور عوام کے ووٹ سے حکومت جانی چاہیے۔‘پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے پی ڈی ایم کے جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ‘آل پارٹیز کانفرنس نے پاکستان کے تمام حقیقی نمائندگان کو ایک صفحے پر اکٹھا کر دیا، اب سلیکٹیڈ اور سلیکٹرز کو ہمارے صفحے پر آنا پڑے گا ورنہ انھیں جانا پڑے گا۔’ان کا کہنا تھا کہ ‘سلیکٹرز کو بھی آج عوام کی طاقت اور فیصلے کو تسلیم کرنا پڑے گا۔’انھوں نے تحریک انصاف کی حکومت اور وزیر اعظم پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ موجودہ حکومت نے ‘پارلیمان کو ربڑ سٹیمپ بنا کر رکھ دیا ہے، پارلیمان میں دھاندلی سے قانون پاس کروائے جا رہے ہیں۔ اگر اس

ملک میں کوئی بدعنوان ہے تو یہ سلیکٹیڈ حکومت اور نالائق حکمران ہیں۔’انھوں نے ملک میں مہنگائی پر بات کرتے ہوئے کہا کہ ‘یہ کیسی تبدیلی ہے کہ آج پاکستان میں تاریخی مہنگائی، بیروزگاری اور غربت ہے۔ ملک میں آٹا، چینی، ادویات، گیس اور بجلی کا بحران ہے اور حکومت اس کی ذمہ داری گذشتہ حکومت پر ڈالتی ہے۔’وزیر اعظم عمران خان پر تنقید کرتے ہوئے بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ ‘عمران خان کے پاس ان مسائل کا حل ٹائیگر فورس ہے، کورونا ہے تو ٹائیگر فورس، سیلاب ہے تو ٹائیگر فورس، مہنگائی ہے تو ٹائیگر فورس۔’انھوں نے اپنے دور حکومت کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ ‘پرویز مشرف نے بھی ملک کو بدامنی اور بجلی کے بحران میں چھوڑا تھا لیکن ہم نے عوام کو لاوارث نہیں چھوڑا، ہم نے ملک کی غریب خواتین کے لیے انقلابی منصوبہ بے نظیر انکم سپورٹ کارڈ کا اجرا کیا، تنخواہوں اور پنشن میں اضافہ کیا۔’حکومت کے بدعنوانی کے بیانیے پر تنقید کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ ‘عمران خان نے ملک میں بدعنوانی ختم کرنے کا وعدہ کیا اور ملک میں مالی بدعنوانی کا ریکارڈ قائم کر دیا، پارٹی فنڈنگ کیس ہو، عاصم سلیم باجوہ کے اثاثوں کا معاملہ ہو، پشاور بی آرٹی میں بدعنوانی کے الزامات، بلین ٹری منصوبے میں کرپشن ہو لیکن کوئی ازخود نوٹس نہیں لیتا، کوئی ان سے نہیں پوچھتا۔’انھوں نے ملک کی خارجہ پالیسی کے حوالے سے بھی تحریک انصاف کی حکومت پر تنقید کی۔ پی ڈی ایم کے جلسے سے مولانا فضل الرحمٰن سمیت دیگر اہم رہنماؤں نے بھی خطاب کیا ۔

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *