مریم نواز کی لندن روانگی ، مگر کب ۔۔۔۔

لاہور(ویب ڈیسک)وزیراعظم کے مشیر برائے احتساب و داخلہ بیرسٹر شہزاد اکبر نے مسلم لیگ (ن) کے حوالے سے اہم خبر دیتے ہوئے کہا ہے کہ ہوسکتا ہے کہ مریم نواز جنوری میں اپنے والد کے پاس پہنچ جائیں،این اے 120 کے ضمنی انتخاب چرانے کا کیس اینٹی کرپشن سے نیب کو بھیج رہے ہیں۔مریم صفدر نے

الیکشن کمیشن اور قانونی پابندیوں کے باوجود حلقہ این اے 120 میں 2017 کے ضمنی انتخاب میں تاریخی دھاندلی کرتے ہوئے سرکاری خزانے سے اڑھائی ارب روپے خرچ کئے، (ن) لیگ کا بیانیہ ووٹ کو عزت دو سے ہٹ کر نوٹ کو عزت دو میں بدل گیا، آل شریف کا وطیرہ ہمیشہ سے یہ رہا ہے کہ وہ اپنی دولت اور اقتدار کے بل بوتے پر ہمیشہ سے نظام کو اپنے مفادات کی تکمیل کیلئے استعمال کرتے رہے ہیں۔جس کی ایک مثال مریم نواز کی ہے جس نے قانون کی دھجیاں بکھیرتے ہوئے الیکشن کمیشن کی ہدایات کو پس پشت ڈال کر حلقہ این اے 120 جسے (ن) لیگ کا گڑھ سمجھا جاتا ہے میں سابق وزیر اعظم نواز شریف کی نا اہلی کے بعد ہونے والے ضمنی الیکشن میں اربوں روپے کے ترقیاتی کام غیر قانونی طور پر شروع کرائے۔بدھ کو اپنے بیان میں انہوں نے کہا کہ این اے 120 کے ضمنی انتخاب میں ہونے والی اس دھاندلی کیخلاف متعلقہ اداروں اور الیکشن کمیشن کو ریفرنس بھیجے جائیں گے۔یاد رہے کہ ضلعی انتظامیہ نے اپوزیشن اتحاد کو 16 اکتوبر کے جلسے کی اجازت دے دی ہے۔ڈپٹی کمشنر گوجرانوالہ نے اپوزیشن اتحاد پی ڈی ایم کو جناح اسٹیڈیم میں 16 اکتوبر کو جلسے کی اجازت دے دی ہے، اس سلسلے میں نوٹی فکیشن بھی جاری کردیا گیا ہے۔ یہ نوٹی فکیشن پی ڈی ایم کی جانب سے اقرار نامہ جمع کروانے پر دیا گیا ہے۔واضح رہے کہ ضلعی انتظامیہ کی جانب سے اجازت نہ دیئے جانے پر گزشتہ روز مسلم لیگ (ن) اور پیپلز پارٹی سے تعلق رکھنے والے وکلا نے احتجاج بھی کیا تھا۔گوجرانوالہ روایتی طور پر مسلم لیگ (ن) کا گڑھ کہا جاتا ہے، 2018 کے عام انتخابات میں بھی مسلم لیگ (ن) ہی کے امیدوار یہاں سے ارکان قومی و پنجاب اسمبلی منتخب ہوئے تھے۔ 16 اکتوبر کے جلسے کی میزبانی بھی مسلم لیگ (ن) ہی کررہی ہے۔ جلسے سے مریم نواز سمیت پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری اور جے یو آئی (ف) کے مولانا فضل الرحمان بھی خطاب کریں گے۔

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *