مریم نواز کے کپڑے ڈیزائن کرنے والے مشہور پاکستانی ڈیزائنر حسن شہر یار (ایچ ایس وائے) نے راز کی بات بتا دی

لاہور (ویب ڈیسک) مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز کے بیٹے جنید صفدر کی شادی کی تقاریب گذشتہ ایک ہفتے سے چرچے میں ہیں اور آئے دن ان کی نئی تصاویر سوشل میڈیا پر شیئر کی جا رہی ہیں۔شادی کی رسومات میں سجاوٹ، موسیقی، دلہا دلہن کی جوڑی اور اہم شخصیات کی آمد تو وقتاً فوقتاً

خبروں میں آتی رہی ہیں مگر ایک سوال واضح طور پر دوسری تمام چیزوں سے زیادہ موضوع بحث بن رہا ہے۔ اور وہ ہے کہ دلہے کی ماں مریم نواز کیسی لگ رہی ہیں؟مقامی ذرائع ابلاغ ہو یا سوشل میڈیا، نوبیاہتے جوڑے کے علاوہ شادی کے ہر فنکشن میں مریم نواز کے، انداز، لباس، میک اپ، زیورات اور شخصیت پر تبصروں کا سلسلہ جاری ہے۔ہر تقریب پر مریم نواز کی تصاویر میں وہ ایک نئے انداز اور لباس میں نظر آرہی ہیں، جسے ان کے مداحوں کی جانب سے بہت پسند کیا گیا۔چاہے پھر وہ قوالی نائٹ میں پہنی گلابی ساڑی، مہندی اور مایوں پر پہنا نیلا اور پیلا جوڑا یا بارات پر پہنا سبز لہنگا ہو۔ اس سے معلوم ہوتا ہے کہ انھوں نے جنید صفدر کی شادی پر ہر تقریب کی مناسبت سے لباس کے رنگ، سٹائل اور ڈیزائنر کا انتخاب کیا اور اس کی خوب پلاننگ بھی کی۔جنید صفدر کی شادی پر مریم نواز نے زیادہ تر ملبوسات پاکستانی ڈیزائنرز کے بنائے پوئے پہنے۔ تاہم ایک جوڑا ایسا بھی تھا جو انڈین ڈیزائنر ابھینو مشرا نے تیار کیا۔جنید صفدر کی بارات کے لیے شیروانی بنانے والے ڈیزائنر حسن شہریار یاسین (ایچ ایس وائے) نے کہا کہ مریم نواز اور ان کی فیملی نے زیادہ تر پاکستانی ڈیزائنرز کے کپڑوں کا ہی انتخاب کیا۔ ’جب وہ میرے پاس جنید کے کپڑوں کے لیے آئیں تو انھوں نے کہا کہ شیروانی ایسی ہونی چاہیے جو پاکستان کی روایات اور کلچر کی عکاسی کرتی ہو۔’اس لیے ہم نے شیروانی کے نیچے بھی کرتا پاجامہ کے بجائے شلوار قمیض بنائی اور شروانی پر بٹن سونے کے نہیں بلکہ میٹل کے لگائے گئے کیونکہ مریم نواز نے ہمیں کہا تھا کہ بس یہ خیال رکھیے گا کہ کپڑے زیادہ مہنگے نہ ہوں۔ وہ ایک فکرمند ماں نظر آرہی تھیں۔‘

Comments are closed.