مسلسل منافع نقصان میں تبدیل، ناقابل یقین تفصیلات

کراچی ( ویب ڈیسک ) وزیر اعظم کے خصوصی معاون برائے اطلاعات لیفٹیننٹ جنرل (ر) عاصم سلیم باجوہ کے اپنے منصب سے استعفے کے بعد پاکستان کے اسٹاکس میں اضافہ ریورس ہو گیا ہے ۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق معاون خصوصی نے ایسے وقت استعفیٰ دیا جب اپوزیشن آئندہ دنوں اپنا احتجاج شروع کر نے والی ہے ۔

ایک موقر قومی روزنامے (jang ) کی رپورٹ کے مطابق جس سے سیاسی بے یقینی کے حوالے سے تشویش میں اضافہ ہو گیا ہے ۔عاصم سلیم باجوہ نے اپنے برقی پیغام میں کہا کہ وزیر اعظم عمران خان نے اضافی عہدے سے سبکدوشی کے لئے میری درخواست قبول کر لی ہے ۔وہ 60 ارب ڈالرز مالیت حجم کے منصوبے سی پیک کے بدستور سربراہ رہیں گے جو چین کے بیلٹ اینڈ روڈ انیشیئٹو کے تحت ہے ۔عمران خان کے ایک اہم ترجمان کا استعفیٰ ایک ایسے وقت سامنے آیا ہے جب تحریک انصاف کی حکومت کو اپنے ابتدائی دو سالہ عرصہ میں مہنگائی پر قابو پا نے اور اقتصادی بحالی کے لئے چیلنج درپیش ہیں ۔دریں اثنا 11سیاسی جماعتوں کے اپوزیشن اتحاد نے رواں ہفتے اپنی پہلی احتجاجی ریلی نکا لنے کا فیصلہ کیا ہے ۔جو عمران خان کی حکومت کو فارغ کر نے کے لئے اپوزیشن کی جدوجہد کی ابتدا ہے ۔ کراچی اسٹاک ایکس چینج کا 100۔انڈیکس 1.4 فیصد پر بند ہوا جس نے اس سے قبل 0.6فیصد کے اضافے کو الٹ دیا ہے۔25مارچ کو رواں سال کی نچلی سطح کو چھونے کے بعد اسٹاکس 48 فیصد بڑھ گئے ہیں ۔سرمایہ کار نہایت محتاظ ہیں اور وہ عاصم سلیم باجوہ کے استعفے سمیت رونما واقعات کے بعد منافع کی بکنگ کر رہے ہیں ۔کراچی میں جے ایس گلوبل کیپٹل لمیٹڈ کے سربراہ قاسم شاہ کے مطابق اپوزیشن کے احتجاج کے منصوبے نے بھی بے یقینی کو ہوا دی ہے ۔وزیر اعظم عمران خان نے پہلے عاصم سلیم باجوہ کی جانب سے استعفے کو مسترد کردیا تھا ۔

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *