مسلم لیگ (ن) والے ایک دوسرے کو مبارکباد دینے لگے

گلگت(ویب ڈیسک) جی بی اے 16  حلقہ 2 سے  مسلم لیگ (ن) کے محمد انور خان کو کامیاب قرار دے دیا گیا۔ ریٹرننگ آفیسر کے مطابق جی بی اے 18  حلقہ 4 تانگیر سے پی ٹی آئی کے گلبر خان کامیاب قرار دیئے گئے ہیں۔ محمد انور خان 6415  ووٹوں سے کامیاب قرار پائے۔

پوسٹل  بیلٹ  پیپرز کی گنتی کے بعد فارم 49  کے ذریعے نتیجے کا اعلان  کیا گیا۔ گلبر خان 4401  ووٹوں سے کامیاب قرار پائے۔ علاوہ ازیںگلگت بلتستان کے الیکشن کمشن نے قانون  ساز اسمبلی کے حلقہ جی بی اے 21 غذر 3 کے پولنگ سٹیشن گندائے میں دوبارہ پولنگ کا اعلان کردیا۔ چیف الیکشن کمشنر گلگت بلتستان راجہ شہباز کے نوٹیفکیشن  کے مطابق  22 نومبرکو صبح 8 سے شام 5 بجے تک  دوبارہ پولنگ ہوگی۔ خیال رہے کہ گندائے پولنگ سٹیشن میں 15 نومبر کی شام شرپسند بیلٹ باکس اٹھا لے گئے تھے جس پر ملزم کو گرفتار کرلیا گیا تھا اور پولنگ باکس قبضے میں لیکر مقدمہ درج کرلیا گیا تھا۔ واضح رہے کہ غیرحتمی و غیر سرکاری نتائج کے مطابق جی بی 21 غذر 3 سے ن لیگ کے امیدوار غلام محمد 4609 ووٹ لے کر آگے ہیں جب کہ پیپلز پارٹی کے محمد ایوب شاہ 3686 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر ہیں۔ دوسری طرف گلگت بلتستان کے تمام حلقوں کے غیر سرکاری نتائج سامنے آگئے جن کے مطابق 7 نشستوں پر آزاد امیدوار، 9 پر تحریک انصاف اور 3 پر پیپلزپارٹی کے امیدوار کامیاب ہوئے ہیں جبکہ مسلم لیگ ن جے یو آئی (ف) اور ایم ڈبلیو ایم کا ایک ایک امیدوار فتح اپنے کام کر سکا۔ گلگت بلتستان میں تمام تعلیمی ادارے 23 نومبر تک بند رکھنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ قبل ازیں الیکشن کے باعث تعلیمی ادارے سولہ نومبر تک بند کئے گئے تھے۔کیونکہ تعلیمی اداروں کو پولنگ سٹیشنز کے طور پر استعمال کیا گیا تھا۔تاہم اب فیصلہ کیا گیا ہے کہ تعلیمی ادارے جو 17 نومبر کو کھلنے تھے اب  23نومبر تک بند رہیں گے۔  گلگت کے ڈائریکٹر کالجز اور اسکولز کے مطابق  الیکشن کے باعث احتیاطی تدابیر اپنانے کے لیے سکولز کو بند کیا گیا، کالجز اور اسکولز کو پولنگ اسٹیشن کے طور پر استعمال کیا گیا تھا جہاں خاصا رش رہا۔ انہوں نے بتایا کہ مکمل صفائی، اسپرے اور احتیاطی تدابیر اپنانے کے اسکول کھولے جائیں گے۔

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *