مشہور زمانہ ماڈل بیلا حدید کا زبردست بیان سامنے آگیا

لندن (ویب ڈیسک) فلسطینی نژاد امریکی ماڈل بیلا حدید نے مے نوشی ترک کرنے کی وجہ بتادی ہے۔بیلا حدید نے اپنے ایک حالیہ انٹرویو میں 6 ماہ قبل اپنی مے نوشی کی عادت چوڑنے کی وجہ بتاتے ہوئے کہا کہ’اُنہوں نے پینا اس لیے چھوڑا کیونکہ یہ انسان کی دماغی صحت کے لیے بہت نقصان دہ ہے۔

اُنہوں نے مزید بتایا کہ’اُنہوں نے 6 ماہ پہلے مے نوشی چھوڑنے کا فیصلہ کیا تھا‘۔سُپر ماڈل نے مزید بتایا کہ’اُنہیں مشروب خاص اتنی پسند تھی کہ ایک وقت ایسا بھی آیا کہ اُنہوں نے اتنا پینا شروع کردیا کہ وہ رات کو باہر نہیں جاتی تھیں کیونکہ اُنہیں لگتا تھا کہ وہ خود پر قابو نہیں رکھ پائیں گی‘۔اُنہوں نے اس حوالے سے مزید بتایا کہ’ اُنہوں نے اپنے ڈاکٹر اور نان الکوہولِک مشروبات کے برانڈ کے شریک بانی سے مے نوشی کے دماغ پر ہونے والے نقصانات کی وضاحت سننے کے بعد فیصلہ کیا کہ وہ نہیں پئیں گی‘۔اُنہوں نے بتایا کہ’اب اُنہیں پینے کی ضرورت محسوس نہیں ہوتی کیونکہ وہ جانتی ہیں کہ صبح 3 بجے اس کا اُن کیا اثر پڑے گاجب وہ خوفناک اضطرابی حالت کے ساتھ اٹھیں گی‘۔

Comments are closed.