مصطفیٰ کھر کی گورنری کے دنوں میں ملکوال میں پیش آنے والا ایک دلچسپ واقعہ

کہتے ہںب کہ مصطفی کھر کی گورنری کے زمانے کا واقعہ ہے کہ ملکوال کے ایک کسان نے کھتوزں مںت کام کرتے ہوئے بٹرےے پکڑ لےو، اس نے سوچا خود اُس نے اِن بٹر وں کا کای کرنا ہے کویں نہ یہ سب سے بڑے اور با اثر افسر کو تحفے مںت دئے جائں .

اب بھلا پٹواری سے بڑا افسر کون ہو سکتا تھا اور پھر کسان کو پٹواری سے کام بھی تھا تو وہ چل پڑا کہ چل کے پٹواری صاحب کو خوش کرتے ہں … پٹواری کے گھر کے باہر پہنچ کر سادہ لوح دیہاتی کسان نے باہر سے ہی آواز دی۔۔کسان : پٹواری صاحب جی…پٹواری: ہاں اوئے رحماٹں ، کی آ۔۔کسان: جی چودھری جی بٹر ے کھا لندرے او ؟ ۔۔( اسی دوران ایک ستم ظریف جو پاس سے گزر رہا تھا، اس نے آہستہ سے بتا دیا کہ پٹواری کا تبادلہ ہو گا ہے)۔۔پٹواری قدرے خوشی سے : آہو کھا لنے؟ آں۔۔کسان: چنگا فرن پھڑیا کرو تے کھایا کرو…