ملکی تاریخ میں پہلی بار : بجٹ 2021 کی تیاری میں ایک خاتون کا حیران کن کردار نکل آیا ؟ یہ کون ہیں

اسلام آباد (ویب ڈیسک)وفاقی بجٹ 2020-21ء ایف بی آر ملک کی 72سالہ تاریخ میں پہلی بار خاتون چیئرپرسن مس نوشین جاوید امجد کی زیرقیادت ایک مستعد‘ پروفیشنل ان لینڈ ریونیو سروس‘ کسٹم سروس کی ٹیم نے تیار کر کے ایک نیا ریکارڈ قائم کیا۔ اس سے پہلے 2020ء تک کے بجٹ حکومت پاکستان کے ادارے سنٹرل بورڈ آف ریونیو

اور کچھ برسوں سے فیڈرل بورڈ آف ریونیو کے مرد چیئرمینوں کی سربراہی میں سی بی آر اور ایف بی آر کی ٹیمیں تیار کرتی رہی ہیں۔ مالی سال 2020-21ء کا ایف بی آر کا بجٹ مس نوشین جاوید امجد کی قیادت میں شبانہ روز ایک کر کے انکی آئی آر کسٹم ٹیم نے تیار کیا۔ چیئرپرسن مس نوشین جاوید امجد نے جنگ کو بتایا کہ 72سالوں میں پہلی بار ایک خاتون چیئرپرسن نے ٹیکس فری بجٹ دیا۔ اس کیلئے انہیں وزیراعظم عمران خان کی طرف سے یہ رہنمائی ملتی رہی کہ زیرو ٹیکسیشن پر فوکس کریں‘ خام مال کی 1623کسٹم لائن میں رائے ضرور دیں۔ وزارت خزانہ کے سیکرٹری کی طرف سے انہیں جو ہدایات ملیں فیڈرل بجٹ 2020-21ء ایف بی آر میں انہوں نے سمویا‘ اس کا کریڈٹ صرف ان کو نہیں انکے ممبران‘ چیف صاحبان‘ ڈائریکٹر جنرل صاحبان کی بجٹ ساز ٹیم کو جاتا ہے جن کو وہ شاباش دیتی ہیں۔ اس تاریخی کارنامے کا کریڈٹ صرف ان کو نہیں انکی شبانہ روز محنت کرنے والی ٹیم کو جاتا ہے۔

Sharing is caring!

Comments are closed.