مگر اسکی ضرورت کیوں پیش آئی ؟

ریاض (ویب ڈیسک) خادم حرمین شریفین شاہ سلمان بن عبد العزیز کی سربراہی میں کابینہ کا آن لائن اجلاس منعقد ہوا جس میں مقامی اور بین الاقوامی امور اور معاملات پر غور کیا گیا اور اہم فیصلے کیےگئے ہیں۔کابینہ نے خادم حرمین شریفین کو اقتدار سنبھالنے کے 6 سال مکمل ہونے پر

مبارکباد پیش کرتے ہوئے بیعت کی تجدید کی ہے۔کابینہ ارکان نے شاہ سلمان کے عہد اقتدار میں سعودی عرب میں ہونے والی ترقی، اصلاحات اور مستقبل کی کامیاب منصوبہ بندی کے علاوہ جی 20 کی سربراہی کرتے ہوئے عالمی برادری میں ملک کے مقام کی بلندی کے لیے کیے جانے والے اقدامات کو سراہا ہے۔ کابینہ نے مجلس شوری میں شاہ سلمان کے سالانہ خطاب اور اس میں پیش کیے جانے والے وژن کو بھی سراہتے ہوئے کہا ہے کہ خادم حرمین شریفین نے اپنے خطاب میں ملک کی اندرونی اور بیرونی پالیسیوں کا احاطہ کیا ہے۔ کورونا وائرس کے مابعد اثرات کو محدود کرنے کے لیے اختیار کیے جانے والے اقدامات اور عازمین حج و عمرہ زائرین کو پیش کی جانے والی سہولتوں کا بھی تذکرہ کیا گیا ہے۔کابینہ نے ولی عہد و وزیر دفاع کے خطاب کو بھی سراہا ہے جس میں انہوں نے وژن 2030 کے حصول کے لیے اب تک کیے جانے والے اقدامات کے علاوہ ملک کی معاشی صورتحال میں بہتری کے لیے اختیار کی جانے والی پالیسوں کا ذکر کیا ہے۔ کابینہ نے ہفتہ اور اتوار کو جی 20 کانفرنس کے حوالے سے تمام پہلوؤں کا احاطہ کیاہے جس میں جی 20 کی قیادت عالمی معیشت کی بہتری کے لیے اختیار کیے جانے والے اقدامات پر غور کریں گے۔ کابینہ نے جی 20 کے وزرائے خزانہ کے اجتماع کے نتیجے میں ہونے والے اتفاق رائے پر غور کیا جس میں جی 20 ممالک کو یہ ترغیب دی گئی کہ کورونا کے باعث مقروض ممالک کے ساتھ رعایت کی جائے۔

Sharing is caring!

Comments are closed.