میدان کرکٹ کی بڑی خبر : کورونا کے دنوں میں لاہور قلندرز نے شائقین کو زبردست سرپرائز دے دیا

لاہور (ویب ڈیسک) لاہور قلندرز ورچوئل ٹیلنٹ ہنٹ پروگرام ’قلندر کے سکندر‘ کا 8ویں ہفتے میں ‏ ڈائریکٹر عاقب جاوید کی سربراہی میں کوچنگ پینل نے 128 کرکٹرز کا انتخاب مکمل کرلیا۔‏پروگرام کے 8ویں اور آخری ہفتے بھی چار چار فاسٹ بولرز، بیٹسمین وکٹ کیپرز اور اسپنرز کا انتخاب ہوا۔بیٹسمینوں میں

انس محمود، سکندر خان، صائم ایاز اور میر سعید شامل ہیں۔ڈائریکٹر لاہور قلندرز نے فاسٹ بولرز میں عاصم علی، سیف الرحمان، راشد خان اور محمد وقار کا انتخاب کیا۔اسی طرح چار اسپنرز میں عدنان جان، علی منظور، حیدر رضا اور نجم نصیر منتخب ہوئے ہیں۔وکٹ کیپرز میں علی شان، حسیب اللّٰہ، محمد عون اور علی ناصر نے اپنا انتخاب یقینی بنایا۔اس موقع پر ڈائریکٹر لاہور قلندرز عاقب جاوید کا کہنا تھا کہ قلندر کے سکندر کا پہلا مرحلہ مکمل ہونے پر بہت خوشی ہے۔انہوں نے کہا کہ ‏مطمئن ہوں کہ ورچوئل پروگرام میں بھی اچھا ٹیلنٹ سامنے آیا ہے، تاہم اب منتخب شدہ کھلاڑیوں کو شارٹ لسٹنگ کے لیے 6 ہفتے لگیں گے۔عاقب جاوید کا کہنا تھا کہ مجموعی طور پر 16 کرکٹرز شارٹ لسٹ کیے جائیں گے، جبکہ منتخب ہونے والے کرکٹرز کو ڈبل وکٹ ٹورنامنٹ کے ڈرافٹ میں شامل کیا جائے گا۔ان کا کہنا تھا کہ ‏لاہور قلندرز ڈبل وکٹ ٹورنامنٹ ستمبر میں کروانے کی منصوبہ بندی کر رہے ہیں۔سی ای او لاہور قلندرز عاطف رانا نے کہا کہ لاہور قلندرز کے دوسرے پروگرامز کی طرح قلندر کے سکندر بھی کامیاب جا رہا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ پہلے مرحلے میں بہترین ٹیلنٹ سامنے آیا، دوسرا مرحلہ بھی دلچسپ ہوگا۔انہوں نے بتایا کہ پاکستان سے ہی نہیں بیرون ملک سے بھی نوجوانوں نے ویڈیوز بھجوائیں۔عاطف رانا کا کہنا تھا کہ ‏پاکستان کے علاوہ 12 ممالک کے نوجوانوں کا بھی قلندرز کے سکندر میں انتخاب ہوا۔پاکستان میں کورونا کے دنوں میں کرکٹ کے حوالے سے یہ ایک شاندار اور قابل ذکر سرگرمی ہے ۔

Sharing is caring!

Comments are closed.