میں تقریباً پاکستان کا ہم عمر ہوں ،

لاہور (ویب ڈیسک) وزیراعظم عمران خان کاکہنا ہے کہ کورونا وائرس کا گراف نیچے لانے کے لئے اگلے دو ہفتے بہت اہم ہیں، لوگ ماسک پہنیں، بھارت سے سبق سیکھیں، وہاں لوگ سڑکوں پر کورونا سے انتقال کر رہے ہیں۔وزیراعظم عمران خان نے لاہور میں کم لاگت والے گھروں کے منصوبے کا سنگ بنیا د رکھ دیا،

تقریب سے خطاب میں انہوں نے کہاکہ کورونا کی دو لہر میں اللہ نے ہم پر بڑا کرم کیا ہے، میں سب کو ماسک پہننے کی تاکید کرتا ہوں، ثابت ہوگیا ہے کہ ماسک سے کورونا کنٹرول ہوتا ہے۔انہوں نے کہا کہ اشرافیہ نے ملک کو قابو میں لیا ہوا ہے، ایک مائنڈ سیٹ ہے کہ یہ چھوٹے سے طبقے کا پاکستان ہے، چھوٹے سے طبقے نے سارے نظام کو گھیرے میں لیا ہوا ہے، قید میں صرف غریب لوگ نظر آتے ہیں، ہمارا انصاف کا نظام طاقتور کو نہیں پکڑ سکتا۔وزیراعظم نے کہا کہ جب انگریز چھوڑ کر گیا سرکاری اسپتالوں میں بہترین علاج ہوتا تھا، آہستہ آہستہ امیروں کے لئے پرائیویٹ اسپتال بن گئے، امیر نجی اسپتالوں اور سپر رچ بیرون ملک اپنا علاج کراتے ہیں ۔انہوں نے کہاکہ طاقتور کو قانون کے نیچے لانا ہے، 30 سال سے حکومت کرنے والے آج کھرب پتی ہیں، سب اکٹھے ہوگئے ہیں، حساب دینے کو تیار نہیں، خود کو قانون سے بالاتر سمجھتے ہیں، پی ڈی ایم کے نام سے یونین بنی ہوئی ہے کہ ہمیں این آر او دے دو، عام لوگوں کو بے شک قید میں ڈال دو۔وزیراعظم نے کہاکہ میری عمر پاکستان جتنی ہے، لاہور میں آہستہ آہستہ کچی آبادیاں بنتے دیکھی ہیں، آہستہ آہستہ لاہور بغیر پلاننگ کے پھیلتا گیا، یہاں آلودگی نہیں تھی، امیروں اور غریبوں کے علاقے الگ ہوگئے، آج آدھے کراچی میں کچی آبادی ہے، کچی آبادی میں رشوت کے عوض بجلی اور گیس ملتی ہے۔انہوں نے کہاکہ عدالتوں میں پچاس پچاس سال کیس حل نہیں ہوتے، جو معاشرہ عام آدمی کو اوپر نہیں اٹھاتا وہ اوپر نہیں جاتا، آج پاکستان میں شور مچا ہوا ہے، حساب دینے کو تیار نہیں، ہمیں طاقت کو قانون کے نیچے لانا ہے، کمزور کو اوپر اٹھانے کی ذمہ داری ریاست کو لینا ہے۔

Comments are closed.