نامور پاکستانی خاتون ڈاکٹر کے انکشاف نے ہلچل مچا دی

کراچی (ویب ڈیسک) نجی ٹی وی چینل پر اپنے پروگرام جرگہ میں میزبان سلیم صافی نے تجزیہ پیش کرتے ہوئے کہا کہ پوری دنیا میں کورونا کا ہی کا ذکر ہورہا ہے، حکمران اسی کا تذکرہ کررہے ہیں،حکومتیں اسی وبا سے نمٹنے کے لئے لگی ہوئی ہیں،لیکن بدقسمتی سے ہمارے ملک پاکستان جہاں

کورونا کے کیسزبہت زیادہ ہیں۔جہاں انسانی اموات کی تعداد بھی بہت زیادہ ہے ،ہم چاہتے تو چین کی مہارت سے فائدہ اٹھا کر پاکستان کو کورونا سے نجات دلوا سکتے تھے، آئی سی یو اسپیشلسٹ ، ڈاکٹر زشازلی منظور نے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ یہ ایک مسلسل لڑائی ہے یہ کبھی ختم نہیں ہوگی اور یہ لہر پر لہر آتی رہے گی۔ویکسین سے متعلق سازشی نظریات بالکل غلط ہیں، ماہر متبادل ادویات / ہومیوپتھک ، ڈاکٹر غلام صابر(اٹلی) نے تجزیہ نے کہا کہ جتنی جلدی کورونا ویکسین لگے گی ہماری مصیبت کم ہوگی ۔ تفصیلات کے مطابق ڈاکٹر زشازلی منظور نے کہا کہ ہزاروں لوگوں کا اب تک علاج کرچکا ہوں ان میں90 فیصد صحت یاب ہوئے ہیں۔یہ برطانیہ والی ہی لہر ہے مگر میں یہ نہیں کہہ سکتا کہ یہ زیادہ خطرناک نہیں ہے ۔اگر ہم نے اس طرح کی باتیں کیں تو لوگ لاپرواہ ہوجائیں گے۔اس لہر کو روکنے کابہترین طریقہ یہی ہے کہ ہاتھوں کو دھونا ،ماسک پہننا،سینی ٹائزر کا استعمال شامل ہیں۔اگر آپ کی قوت مدافعت اچھی ہوگی تو بیماری سے بچنے میں آسانی ہوگی۔اگر مریض بروقت آجائے اور جتنی شدت سے وہ بیمار ہے اسی شدت سے علاج ہوجائے تو صحت یاب ہوسکتا ہے۔کورونا بچوں کو بھی ہورہا ہے مگر اس میں شدت نہیں ہے۔کورونا ویکسین سے متعلق سازشی نظریات بالکل غلط ہیں ۔ویکسین کے کچھ مضر اثرات ہوسکتے ہیں۔ویکسین آپ کو کچھ نہیں کرے گی ۔ویکسین لگنے کے بعد بھی 6 ہفتے تک آپ کو احتیاط تدابیر اختیار کرنا ہوگی۔ماہر متبادل ادویات / ہومیوپتھک ، ڈاکٹر غلام صابر(اٹلی) نے تجزیہ پیش کرتے ہوئے کہا کہ ابھی جو لہر چل رہی ہے اس میں آٹھ دس دن بندہ ٹھیک رہتا ہے دوا بھی اثر کرتی ہے لیکن اچانک صبح سے شام تک مریض کی موت واقع ہوجاتی ہے۔

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *