نیوزی لینڈ کے عوام اپنی لیڈر پر فخر کرنے لگے

لاہور(ویب ڈیسک)نیوزی لینڈ کے پارلیمانی انتخابات میں فتح حاصل کرنے والی کی حکمران جماعت کی رہنما جیسنڈا آرڈن نے اگلے دو سے تین ہفتوں میں نئی حکومت تشکیل دینے کا اعلان کیا ہے۔عام انتخابات میں واضح کامیابی حاصل کرنے والی لیبر پارٹی کی رہنما جیسنڈا آرڈن نے کہا ہے کہ وہ اگلے دو سے تین ہفتوں

کے اندر نئی حکومت تشکیل دیں گی۔انہوں نے کہاکہ 1996 ءکے بعد سے پہلی مرتبہ نیوزی لینڈ کی تاریخ میں کسی پارٹی نے اتنی اکثریت حاصل کی ہے کہ وہ اکیلے حکومت بنا سکے۔واضح رہے کہ گزشتہ روز ہونے والے انتخابات میں لیبر پارٹی نے پارلیمان کی 120 میں سے 64 نشستیں حاصل کی ہیں۔یاد رہے کہ نیوزی لینڈ میں ہونے والے پارلیمانی انتخابات میں حکمراں جماعت ’لیبر پارٹی‘ نے واضح کامیابی حاصل کرلی ہے جس کے بعد وزیراعظم جیسنڈا آرڈرن کی دوسری بار بھی وزیر اعظم بننے کی راہ ہموار ہوگئی ہے۔عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق نیوزی لینڈ کے پارلیمانی الیکشن میں موجودہ وزیراعظم جسینڈا آرڈن کی جماعت ’لیبر پارٹی‘ نے واضح کامیابی حاصل کرلی ہے جب کہ اس مرتبہ انتخابات میں آرڈرن کا مقابلہ دائیں بازو کی قدامت پسند رہنما جوڈتھ کولنز سے تھا۔ جسینڈا آرڈن نے فتح کو تاریخی قرار دیا۔پارلیمانی انتخابات میں جسینڈا آرڈن کی جماعت لیبر پارٹی نے 50 فیصد نشستیں حاصل کرلی ہیں اور ان کے مدمقابل جوڈتھ کولنز کی جماعت لیبر پارٹی نے 27 فیصد نشستیں حاصل کی ہیں جب کہ دیگر جماعتوں نے مجموعی طو پر 8 فیصد ووٹ حاصل کیے۔ اس طرح ملک میں تاریخ میں پہلی مرتبہ پارلیمان میں بائیں بازو کے اتحاد کو واضح اکثریت حاصل ہوئی ہے۔نیوزی لینڈ میں حکومت سازی کے لیے پارلیمان کی 61 نشستوں پر کامیابی ضروری ہوتی ہے ورنہ اکثریت نہ ملنے کی صورت میں دوسری جماعتوں کے ساتھ ملکر مخلوط حکومت بنانا پڑتی ہے اور ابتدائی نتائج سے لگتا ہے کہ جسینڈا آرڈن دوسری بار بھی بآسانی وزیراعظم بن جائیں گی۔

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *