(ن) لیگ نے پہلی بار کھل کر وزیراعظم عمران خان کے موقف کی تائید کر دی

کراچی (ویب ڈیسک)ن لیگ کے رہنما شاہد خاقان عباسی نے پہلی بار وزیراعظم عمران خان کے موقف کی تائید کردی، شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ آج عمران خان نے کشمیر پر جو موقف اپنایا اس کی حمایت کرتے ہیں، کچھ دن پہلے وزیرخارجہ نے کہا تھا کہ آرٹیکل 370ہمارا مسئلہ نہیں

ہے لیکن آج عمران خان نے کہہ دیا کہ جب تک آرٹیکل 370ختم نہیں ہوتا تب تک بھارت سے مذاکرات نہیں کریں گے۔وہ نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں میزبان حامد میر سے گفتگو کررہے تھے۔ پروگرام میں وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے احتساب و داخلہ شہزاد اکبر اور بیوروچیف جیو نیوز لاہور رئیس انصاری بھی شریک تھے۔ شہزاد اکبر نے کہا کہ نئے شواہد کی بنیاد پر کوئی بھی کیس دوبارہ کھولا جاسکتا ہے، حدیبیہ کیس ٹیکنیکل گراؤنڈ پر نہیں میرٹ پر کھولنے کی بات کررہے ہیں اس میں نئے شواہد بھی ہوسکتے ہیں، شہباز شریف نے عدالت کے سامنے پورے حقائق نہیں رکھے، حدیبیہ پیپر ملز کیس دوبارہ کھل سکتا ہے اور نئی تحقیقات بھی ہوسکتی ہے۔سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ شہباز شریف نے اظہار یکجہتی کیلئے فلسطینی سفارتخانے کا دورہ کیا، فلسطینی سفارتکاروں نے فخر کا اظہارکیا کہ پاکستانی قوم ہمارے ساتھ ہے، پاکستانی قوم ہمیشہ فلسطینی قوم کے شانہ بشانہ کھڑی رہی ہے، مسئلہ فلسطین پر جو فلسطین کی پالیسی ہے وہی پاکستان کی پالیسی ہے، کشمیر کا مسئلہ حکومت نے متنازع کردیا ہے۔خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ آج عمران خان نے کشمیر پر جو موقف اپنایا اس کی حمایت کرتے ہیں، کچھ دن پہلے وزیرخارجہ نے کہا تھا کہ 370کی کوئی حیثیت نہیں ہے مسئلہ 35/Aکا ہے،آج وزیراعظم نے واضح کردیا کہ ہندوستان نے 370/Aپر جو عمل کیا اسے واپس لیے بغیر کوئی بات چیت نہیں ہوگی، پاکستان کا موقف ہے مسئلہ کشمیر اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق حل کیا جائے آج وزیراعظم نے اس کا ذکر نہیں کیا، بیک ڈور چینل صرف بات چیت کرسکتا ہے فیصلہ پاکستانی عوام کو ہی کرنا ہے۔شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان کا نیب کیسوں سے کیا تعلق ہے،یہ غیرقانونی اور غیراخلاقی باتیں کررہے ہیں۔

Comments are closed.