واقعہ کا ڈراپ سین ۔۔۔۔اصل کہانی تو کچھ اور نکلی

فیصل آباد (ویب ڈیسک) کل خبرسامنے آئی تھی کہ فیصل آباد کے بھرے بازار میں کچرا چننے والی خواتین کو بے لباس کر کے بہیمانہ زدوکوب کر دیا گیا ۔ملت ٹاؤن بازار کے درجن بھر افراد نے پانی پینے کے لیے دکان میں آنے والی خواتین کو دکان میں بند کردیا۔الزام لگایا کہ وہ چوری کرنے دکان میں

گھسی تھیں، اس کے بعد خواتین کو بے لباس کیا گیا اور زدوکوب کیا گیا ۔ قریب موجود افراد روک ٹوک کے بجائے خاموش تماشائی بنے رہے اور واقعہ کی ویڈیو بناتے رہے۔ویڈیو وائرل ہونے پر پولیس نے 5 افراد حراست میں لے لیے اور دیگر کی گرفتاری کے لیے ریڈ کیے جارہے ہیں۔دوسری جانب صنعتی شہر فیصل آباد میں چوری کے الزام پر خواتین کو بے لباس کرنے کے معاملے میں اہم پیشرفت سامنے آگئی ۔ سپریٹنڈنٹ پولیس(ایس پی)نعیم عزیز کےمطابق دکانداروں کاموقف ہےکہ خواتین نے چوری کی اور پھر خود ہی اپنے کپڑے پھاڑے۔ اس کے علاوہ کچھ سی سی ٹی وی ویڈیوز میں بھی خواتین کو اپنے کپڑے خود پھاڑتے ہوئے دیکھا گیا ہے، خواتین کے کچھ کپڑے کھینچا تانی میں بھی پھٹے ہیں۔انہوں نے مزید بتایا کہ دکانداروں کی جانب سے خواتین پر تشدد کی بھی کچھ ویڈیوز سامنے آئی ہیں، تفتیش کے دوران تمام ویڈیوز کا جائزہ لے رہے ہیں ،تمام پہلوؤں کو مد نظر رکھا جائے گا۔