واقعہ کی تفصیلات اور اندرونی کہانی

اسلام آباد(ویب ڈیسک) پاکستان میں تعینات افغان سفیر نجیب اللہ الخیل کو وارن کرنے کے لیے ان کی صاحبزادی کو زدوکوب کیا گیا ۔ نجی ٹی وی چینل کی ایک رپورٹ کے مطابق یہ افسوسناک واقعہ گزشتہ جمعرات کی سہ پہر پیش آیا جب 27سالہ سیلسیل بلیو ایریا سے اپنے چھوٹے بھائی کے لیے

ایک تحفہ خرید کر واپس روانہ ہوئی۔ اس نے ایک ٹیکسی کو روکا اور جونہی وہ ٹیکسی میں بیٹھی، ایک اور شخص ٹیکسی میں گھس آیا اور اسے زدوکوب کرنا شروع کر دیا۔وہ آدمی سیلسیل سے کہہ رہا تھا کہ ”تمہارے باپ کو ہم نہیں چھوڑیں گے۔“اس کے فوری بعد سیلسیل بے ہوش ہو گئی۔ جب اسے ہوش آیا، اس وقت شام کے 6بج رہے تھے اور وہ ایک سنسان روڈ پر پڑی تھی۔ اس کے ہاتھ پاﺅں بندھے ہوئے تھے۔ سیلسیل نے ایک راہگیر سے پوچھا تو اس نے بتایا کہ یہ ایف 7کا علاقہ ہے۔ وہاں سے سیلسیل نے ایک ٹیکسی لی اور ایف 9پہنچی۔ وہاں سے گیٹ نمبر 3سے حکمت نامی ایک شخص اسے سرکاری گاڑی پر آ کر لے گیا۔رپورٹ کے مطابق اس واردات میں سیلسیل کا دوپٹہ، موبائل فون اور جوتے غائب ہوئے اور جب ملزمان نے اسے واپس سڑک پر پھینکا تو اس کے پرس میں 50روپے کا ایک نوٹ ڈال دیا جس پر لکھا تھا کہ ”اب تمہاری باری ہے، سفیر “ سیلسیل کو طبی معائنے کے لیے ہسپتال لیجایا گیا اور ایس ایچ او کوہسار نے سیلسیل کے بیان کے مطابق واردات کی جگہ کی شناخت اور ملزمان کی گرفتاری کے لیے ٹیم بنا دی ہے۔ ایک ٹیم کو علاقے کے سی سی ٹی وی کیمروں کے ذریعے تحقیقات کرنے کا حکم دیا گیا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *