وہ مقام جہاں 40 جمعراتوں کو چراغ جلانے والا برے سے برا گلوکار بھی سریلی آواز والا بن جاتا ہے ۔۔۔۔

لاہور (ویب ڈیسک) استاد بڑے غلام علی خان بابا بلھے شاہ سے منسوب شہر قصور میں 2 اپریل سنہ 1902 میں پیدا ہوئے۔ ابتدائی طور ان کے گھرانے کو ’قصور گھرانہ‘ کہا گیا جو آگے چل کر پنجاب کے مشہور پیٹالہ گھرانے میں ضم ہو کر برصغیر کے سنگیت میں مستند اور منفرد کہلایا۔

آپ کے بزرگ اور جدِ امجد فاضل پیرداد غزنی سے آ کر قصور آباد ہوئے تھے۔ ان کے بارے میں مشہور ہے کہ وہ درویش صفت گویے تھے جو جنگلوں میں نکل گئے تھے۔استاد بڑے غلام علی خاں کے پوتے مظہر علی خاں نے بتایا کہ یہ بابا بلھے شاہ کے زمانے کا واقعہ ہے۔ قصور اور آس پاس کے علاقے میں مشہور تھا کہ جو کوئی بابا فاضل پیر داد کی قبر پر 40 جمعراتیں چراغاں کرے گا قدرت اسے سُر اور تال عطا کرے گی۔استاد بڑے غلام علی خان کے والد علی بخش خاں اور چچا استاد کالے خاں اپنے زمانے کے بے مثل گویے تھے۔ دونوں صاحبان پیٹالہ گھرانہ کے استاد فتح علی خاں کے شاگرد ہوئے جس سے برصغیر کے سنگیت میں اور بھی وسعت آئی۔

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *