ویراٹ کوہلی سے زبردستی استعفیٰ لیے جانے کا انکشاف

نئی دہلی (ویب ڈیسک)بھارتی کپتان ویرات کوہلی سے ون ڈے ٹیم کی کپتانی واپس لیے جانے تبصروں کا سلسلہ جاری ہے۔بھارتی میڈیا رپورٹ کے مطابق کرکٹ بورڈ 48 گھنٹے تک کوہلی کے ون ڈے قیادت سے مستعفی ہونے کے اعلان کا انتظار کرتا رہا۔تاہم جب انہوں نے خود سے استعفی نہ دیا تو

سلیکٹرز کو ٹی 20 کے ساتھ ایک روزہ ٹیم کی کپتانی روہت شرما کے سپرد کرنا پڑی۔ویرات کوہلی 2023 تک ون ڈے ٹیم کی قیادت کرنا چاہتے تھے۔واضح رہے کہ بھارتی کرکٹ بورڈ کے سربراہ سارو گنگولی کا کہنا تھا کہ ہم وائٹ بال کرکٹ کے دو فارمیٹس میں الگ الگ کپتان نہیں چاہتے تھے جس کے باعث ویرات کوہلی کی جگہ روہت شرما کو کپتان بنایا گیا۔ویرات کوہلی کا بطور کپتان ریکارڈ بہترین ہے مگر جن میچز میں روہت شرما نے کپتانی کی ان کے نتائج بھی بہت اچھے ہیں۔