ٹائیگر فورس کو میدان میں اتارنے کا اعلان ۔۔۔۔

لاہور(ویب ڈیسک)روز بروز بڑھتی ہوئی مہنگائی کے خلاف وزیراعظم عمران خان نےایکشن پلان تیار کرلیا اور اس سلسلے میں ٹائیگر فورس کو میدان میں اتارنے کا فیصلہ کرلیا گیا ہے ، اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں کمی کیلئے فیصلوں پر عمل درآمد کل سے ہوگا ۔ اس حوالے سے تفصیلات کے مطابق پلان کے تحت

حکومتی اداروں اور ریاستی وسائل کے بھرپور استعمال کا فیصلہ کیا گیا ہے ، اس ضمن میں وزیراعظم نے ایک بار پھر ٹائیگر فورس کو میدان میں اتارنے کا فیصلہ کیا ہے، جہاں ٹائیگر فورس کو ذخیرہ اندوزوں کی نشاندہی کا ٹاسک سونپے جانے کا امکان ہے ، اس سلسلے میں عمران خان کی طرف سے معاون خصوصی برائے یوتھ افیئرز عثمان ڈار سے مشاورت مکمل کرلی گئی اور وزیراعظم نے ٹائیگرفورس کا بڑا کنونشن بلانے کی ہدایت کر دی ، کنونشن آئندہ ہفتے اسلام آباد میں ہوگا جس میں ٹائیگر فورس کے جوان شریک ہوں گے ، جہاں وزیراعظم عمران خان نوجوانوں کی حکومتی ایکشن پلان پر رہنمائی کریں گے ، وزیراعظم سےگائیڈ لائنز ملنے کے بعد عثمان ڈار نے کنونشن کی تیاریاں شروع کر دیں۔اسی حوالے سے وزیراعظم عمران خان نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر ایک پیغام بھی جاری کیا ہے ۔ اپنے ٹوئٹ میں وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ ہفتے کے روز ٹائیگر فورس کے کنونشن میں شرکت کروں گا ، چاہتا ہوں ٹائیگر فورس روزانہ کی بنیاد پر اشیا خورد ونوش کی قیمتوں کا جائزہ لے ، ٹائیگر فورس آٹا، چینی، دال اورگھی کی قیمتوں کوچیک کرے ، ٹائیگر فورس اپنے علاقوں میں اشیا کی قیمتیں چیک کر کے اپنے پورٹل پر پوسٹ کرے ، ان تمام چیزوں پر ہفتے کو ہونے والی میٹنگ میں بات ہوگی ۔ دوسری جانب چیکنگ کے حوالے سے ایک خبر کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کے رہنما اور رکن سندھ اسمبلی خرم شیر زمان نے وزیراعظم سے سندھ کے گودام کھلوا کر گندم نکالنے کامطالبہ کرتے ہوئے کہاکہ سندھ میں ساڑھے12لاکھ ٹن گندم غائب کردی گئی،سندھ حکومت فلورملزکوگندم ریلیزنہیں کررہی، پیپلز پارٹی قیادت ملک میں افراتفری پھیلانے کی کوشش کررہی ہے۔پی ٹی آئی رہنما نے کہاکہ پلاننگ کے تحت آٹے کی ذخیرہ اندوزی کی جارہی ہے تاکہ شارٹیج ہو،آٹے کی قیمتوں میں اضافے کابوجھ وفاق پر ڈالنے کی کوشش کی جارہی ہے، وزیراعظم کو کسی صورت تو یہ کمی پوری کرنی ہے ،کمی پوری کرنے کیلئے گندم پنجاب سے لائی گئی تو وہاں قلت ہو جائے گی ،انہوں نے کہاکہ وفاقی حکومت نے1.7ملین میٹرک ٹن گندم صوبے کو دی،پلاننگ کے تحت آٹے کی ذخیرہ اندوزی کی جارہی ہے تاکہ کمی ہو۔ پیپلزپارٹی کےخلاف پہلے سے کیس چل رہاہے،لاکھوں بوریاں گندم کی غائب کی گئیں،پیپلزپارٹی ساڑھے12لاکھ ٹن گندم گوداموں میں چھپا کربیٹھی ہے،چیف جسٹس اوروزیراعظم سے گزارش ہے کہ اس پر نوٹس لیں،سندھ حکومت دودھ کی قیمتوں کو کنٹرول نہیں کر سکتی،انہوں نے کہاکہ سندھ میں13 سال میں کھربوں صحت پر خرچ کئے گئے لیکن بنیادی صحت لوگوں کو میسر نہیں ۔

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *