پاناما پیپرز سے بھی بڑا اسکینڈل آج بے نقاب کیا جارہا ہے ۔۔۔۔

اسلام آباد (ویب ڈیسک) انٹرنیشنل کنسورشیم آف جرنلسٹس (آئی جی آئی جے) نے پاناما سے بھی بڑے سکینڈل کی تحقیقات مکمل کرلیں۔ پاناما سے بھی زیادہ پاکستانیوں کے نام ان تحقیقات میں شامل ہیں۔ نجی ٹی وی چینل سے گفتگو کرتے ہوئے صحافی عمر چیمہ نے بتایا کہ یہ اب تک کا سب سے بڑا

سکینڈل ہے جس کو ’پینڈورا پیپرز‘ کا نام دیا گیا ہے، تفصیلات کے مطابق دنیا کی نامور شخصیات کے مالی امور کی بڑی بین الاقوامی تحقیق ’’پنڈورا پیپرز‘‘ کے نام سے مکمل ہوگئی، پاناما پیپرز سے بڑے مالیاتی لیکس، پینڈورا پیپرز آج منظر عام پر آئیں گے۔ بین الاقوامی تحقیق ’’پنڈورا پیپرز‘‘ ایک کروڑ انیس لاکھ فائلوں پر مشتمل ہیں ، ’’پنڈورا پیپرز‘‘ کے لیے دنیا بھر کے 117 ممالک کے 150 میڈیا اداروں اور دنیا بھر کے 600 سے زائد رپورٹرز نے حصہ لیا ، دی نیوز کے سینئر صحافی عمر چیمہ اور فخر درانی پاکستان سے ان تحقیقات کا حصہ تھے۔اعداد و شمار کو جمع کرنے اور تعاون کرنے کے حساب سے ’’پنڈورا پیپرز‘‘ پاناما پیپرز سے زیادہ بڑے ہیں، دنیا کی صحافتی تاریخ میں کسی تحقیق پر کام کرنے والی یہ سب سے بڑی صحافتی ٹیم ہے، ’’پنڈورا پیپرز‘‘ کی تحقیق پر دنیا بھر کے 600 سے زائد رپورٹرز نے دو سال تک کام کیا ہے۔”دی نیوز “ کے صحافی عمر چیمہ نے پنڈورا پیپرز کے حوالے سے جیو نیوز سے بات کرتے ہوئے بتایا کہیہ ایک نئی ہسٹری ہے کہ آج تک کوئی اتنا ڈیٹا پہلے ریلیز نہیں ہوا جو اس میں آرہا ہے اس پر تقریباً کوئی 2 سال کام ہوا ہے اور آپ یہ کہہ لیں کہ یہ پاناما سے بڑا ہے ۔ پاناما میں اتنے ڈاکیومنٹس نہیں آئے تھے ، پاناما میں اتنے زیادہ لیول پر جرنلسٹس شامل نہیں تھے جتنے ابھی ہیں اوور آل کوئی ایک کروڑ 20 لاکھ ڈاکیومنٹس تھے جن کو اسٹیڈی کیا گیا ہے ، جن کو انویسٹی گیٹ کیا گیا ہے ،

جن کو ویری فائی کیا گیا ہے۔انہوں نے بتایا کہ اس تحقیق میں 600 سے زائد جرنلسٹس ہیں جنہوں نے مل کر اس پر انویسٹی گیشن کی ہے اور 150کے قریب میڈیا آرگنائزیشنز ہیں اور 100 سے زیادہ ممالک ہیں جن کے جرنلسٹس شامل تھے ۔ اوور آل یہ جتنی آج تک آپ کہہ لیں کہ انویسٹی گیشن جرنل ازم یا اس کے علاوہ اس لیول پر اور اتنے جس میں اتنی زیادہ تحقیق اور اتنے زیادہ ڈاکیومنٹس کا احاطہ کیا ہو یہ اپنی نوعیت کی ایک پہلی انویسٹی گیشن ہے اور یہ ایک نئی ہسٹری ہے ۔ عمر چیمہ نے بتایا کہ اس میں بہت زیادہ پاکستانی شخصیات ہیں ، یہ پاناما پیپرز سے بڑا ہے ، اس سے بڑی ایک انویسٹی گیشن ہے تو اس لحاظ سے جو پاکستانی لوگ ہیں جن کا اس میں نام آیا وہ بھی پاناما پیپرز سے زیادہ ہیں اور کافی انٹرسٹنگ قسم کے نام ہے لیکن یہ ہے کہ ابھی کوئی آپ کو 24 گھنٹے مزید انتظار کرنا پڑے گا ، ہم تو تقریباً 2 سال انتظار کیا ہے اور امید ہے کہ لوگ کوئی ایک دن کا مزید انتظار کرلیں گے اور یہ کل اس پر کوئی ریلیز ہو جائے گا۔غیر ملکی میڈیا رپورٹ کے مطابق پینڈورا پیپرز میں ہزاروں خفیہ کمپنیوں کے ذریعے سے دنیاکی با اثر شخصیات نے اربوں روپے سمندر پار ٹیکس چوری کی پناہ گاہوں میں منتقل کئے ، پینڈورا پیپرز میں کئی موجودہ اور سابقہ حکمرانوں ، نمایاں کاروباری شخصیات ، معروف شخصیات ، مفرور افراد اور ججز کے نام بھی شامل ہیں۔

Comments are closed.