پاکستان میں فی لیٹر کتنے روپے کمی ممکن ہے ؟

اسلام آباد(ویب ڈیسک) پاکستان میں تیل اور گیس کی قیمتوں کا تعین کرنے والے ادارے آئل اینڈ گیس ریگولیٹری اتھارٹی (اوگرا) نے یکم اکتوبر سے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کی تجویز دی ہے۔اوگرا کی جانب سے حکومت کو بھجوائی گئی تجاویزمیں کہا گیا ہے کہ عالمی منڈی میں خام تیل کی قیمتوں میں

کمی ہوئی ہے۔حکومت چاہے تو پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں 3 سے 4 فیصد فی لٹر کمی کرسکتی ہے تاہم اگر قیمتیں برقرار رکھنی ہیں تو پٹرولیم لیوی کی شرح بھی بڑھائی جاسکتی ہے۔ اوگرا نے پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں دو روپے تک فی لٹرکمی کی تجویز دی ہے۔ذرائع کے مطابق اوگرا سفارشات کی روشنی میں پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں سے متعلق حکومت نے غور شروع کردیا ہے۔ پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں کمی ہو گی یا برقرار رہیں گی، فیصلہ آج ہوگا۔ ذرائع کے مطابق پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں رد و بدل کا فیصلہ وزیراعظم کی مشاورت سے ہوگا۔ وزارت خزانہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں سے متعلق حتمی اعلان آج کرے گی۔خیال رہے کہ اس سے قبل وزیراعظم نے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کی تجویز مسترد کر دی تھی۔30 جولائی کو اوگرا نے پیٹرول کی قیمت میں 7 روپے اور ڈیزل کی قیمت میں 8 روپے فی لیٹر اضافے کی تجویز حکومت کو بھجوائی تھی۔اوگرا نے تجاویز30 روپے فی لیٹر پیٹرولیم لیوی کی بنیاد پر ارسال کی تھیں۔ پٹرول کی قیمت میں 26 روپے70 پیسے پٹرولیم لیوی شامل ہے۔

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *