پنجاب میں بلدیاتی انتخابات الیکٹرانک مشینوں سے ہونگے یا پرانے طریقے سے ؟

لاہور(ویب ڈیسک) پنجاب حکومت نے بلدیاتی انتخابات الیکٹرانک ووٹنگ مشینوں پر کروانے کا فیصلہ کر لیا ہے۔حکومت نے فیصلہ کیا ہے کہ پنجاب میں الیکٹرانک ووٹنگ مشینوں پر انتخاب کو لوکل باڈیز ایکٹ میں شامل کیا جائے گا۔ وزیر اعلیٰ سردار عثمان بزدار نے لوکل باڈیز ایکٹ میں ای وی ایم مشین پر انتخاب کی شق کو شامل کرنے

کی منظوری دے دی ہے جبکہ وفاقی حکومت قانون بنا چکی ہے اورپنجاب حکومت بھی ای وی ایم کو لوکل باڈیز ایکٹ کا حصہ بنائے گی۔اس سے قبل پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کی وفاقی حکومت نے الیکٹرانک ووٹنگ مشین (ای وی ایم) اور آئی ووٹنگ پر عملدرآمد سے متعلق الیکشن کمیشن سے مکمل تعاون کا اعلان کر دیا۔وفاقی وزیر سائنس و ٹیکنالوجی سینیٹر شبلی فراز کی صدرات میں انٹرنیٹ والیکٹرونک ووٹنگ مشین سے متعلق بین وزارتی کمیٹی کا اجلاس ہوا، مشیر برائے پارلیمانی امور بابر اعوان، وفاقی وزیر قانون فروغ نسیم اور وفاقی وزیر انفارمیشن ٹیکنالوجی امین الحق شریک ہوئے۔اجلاس میں آئندہ انتخابات میں ای وی ایم اور آئی ووٹنگ سے متعلق امور زیر غوآئے۔اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سینیٹر شبلی فراز نے کہا کہ حکومت ای وی ایم اور آئی ووٹنگ پر عملدرآمد سے متعلق الیکشن کمیشن سے مکمل تعاون کرے گی، مالی، اسٹوریج، ٹیسٹنگ لیبارٹریز سمیت دیگر ضروریات سے متعلق حکومت الیکشن کمیشن سے تعاون کریگی۔انہوں نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان کی خواہش ہے کہ آئندہ جتنے بھی انتخابات ہوں، ای وی ایم اور آئی ووٹنگ کے ذریعے ہوں، ای وی ایم ایک خواب ہے جیس کو ہم حقیقت بنانا چاہتے ہیں۔

Comments are closed.