پیشگوئی کردی گئی

لاہور (ویب ڈیسک) دیکھیں اگر جمہوریت کے لئے سو،پچاس لوگ فوت بھی  ہو جاتے ہیں تو کوئی گھاٹے کا سودا نہیں انہوں نے جی کے کون سا ہمالیہ سر کر لینی ہے۔اس لئے کووڈ کی پروا کرنے کی ضرورت نہیں  اپوزیشن کو گج وج کے رولے رپّے کے ساتھ لاہور میں جلسہ کرنا چاہیے۔

نامور کالم نگار ایثار رانا اپنے ایک کالم میں لکھتے ہیں ۔۔۔۔۔۔۔۔۔اللہ سلامت رکھے ہمارے آقاؤں کو،یہ کیڑے مکوڑے تو ویسے ہی فِل اِن دی بلینک ہوتے ہیں۔اب تو ہماری فردوس آپا گھسن مار کے چھ،سات ٹائلیں ایویں توڑ دیتی ہیں۔اپوزیشن سمجھ لے رب ان کے نیڑے ہے یا نہیں گھسن ضرور نیڑے ہے۔آپا فردوس کا اگلا بیان یہ بھی آسکتا ہے کہ ”نواں آیا ایں اوئے ثناء اللہ رانیا میں وکھیاں بھن دیاں گی“۔افسوس صد افسوس ہماری ساری عاجزی،شرافت”ہارڈ ٹاک“میں اسحاق ڈار کی صورت میں نظر آتی ہے ورنہ ہم سارے اپنے گھر کے شیر ہیں،بلی تو بس ہم انگریزوں کے سامنے بنتے ہیں۔لیگی ذرائع کا دعویٰ ہے کہ وہ مینار پاکستان میں خادم رضوی (مرحوم) کے جنازے سے بڑا اجتماع کر کے دکھائیں گے۔بھیا جمہوریت کا جنازہ نکلنا ہے کوئی مذاق تو نہیں۔کارکنوں کی زندگیاں تو ویسے بھی کھیڈ تماشہ ہیں۔

Sharing is caring!

Comments are closed.