پی ٹی آئی حکومت کو پانچ سال پورے کرنے چاہیں یا نہیں ؟

کراچی (ویب ڈیسک) 70فیصد پاکستانیوں نے تحریک انصاف کی حکومت کے پانچ سال مکمل ہونے کی بھرپور امید کا اظہار کیا ہے ۔ 69فیصد وباء کیخلاف حکومتی کارکردگی اور 58فیصد خارجہ پالیسی پرحکومتی کوششوں سے بھی مطمئن ہیں ۔ لیکن معاشی محاذ پر 45 فیصد حکومتی کوششوں سے مطمئن تو 44 فیصد غیرمطمئن نظرآئےجبکہ

بدعنوانی کے خاتمے میں 48 فیصد نے حکومت کو کامیاب تو40 فیصد نے ناکام قرار دیا ۔ وزیر اعظم عمران خان کی تین سال حکومتی کارکردگی سے بھی 48 فیصد پاکستانی خوش تو 45 فیصد ناراض نظر آئے ۔جس میں صوبہ پنجاب میں 50 فیصد نے وزیر اعظم کی کارکردگی سے مطمئن نہ ہونے کا بتایا البتہ بلوچستان میں 74 فیصد نے کارکردگی پر بھر پور اطمینان کا اظہار کیا ۔ اس بات کا انکشاف گیلپ پاکستان کے تازہ ترین سروے سے ہوا۔ جس میں ملک بھر سے 12 سو افراد نے حصہ لیا۔ سروے اگست 2021 کے آخری ہفتے میں کیا گیا۔ سروے میں ہر 10میں سے 07پاکستانی یعنی 70 فیصد اس امید کا اظہار کرتے نظر آئے کے پی ٹی آئی کی حکومت اپنے پانچ سال کامیابی سے مکمل کرے گی ۔ البتہ 20 فیصد نے اس کے برعکس رائے دی اور پانچ سال مکمل نہ کرنے کا کہا ۔ 10 فیصد نے اس سوال کا کوئی جواب نہیں دیا۔ سروے میں وباء کیخلاف حکومتی کارکردگی سےہر 10 میں 7 پاکستانی یعنی 69 فیصد خوش نظر آئے۔ البتہ 22 فیصد نے عدم اطمینان کا اظہار کیا۔ خارجہ پالیسی پر بھی 58 فیصد پاکستانی حکومتی کارکردگی سے مطمئن نظر آئے۔ جبکہ 24 فیصد نے غیر مطمئن ہونے کاکہا۔ 54؍ فیصد پاکستانیوں نے غریبوں کی مدد کے معاملے پر بھی حکومتی کارکردگی کو اطمینان بخش کہا۔ جبکہ 38 فیصد نے عدم اطمینان کا اظہار کیا۔ لیکن معاشی محاذ پر عوامی آراء بٹی ہوئی نظر آئی ۔45 فیصد نے حکومتی کارکردگی پر اطمینان کا اظہار کیا

تو 44فیصد نے حکومتی کارکردگی کو غیر تسلی بخش کہا ۔ بدعنوانی کو کنٹرول کرنے کے معاملے پر بھی 48 فیصد پاکستانی حکومتی کارکردگی سے خوش تو 40 فیصد نالاں نظر آئے۔ وزیر اعظم عمران خان کی تین سالہ مجموعی حکومتی کارکردگی سے بھی سروے میں 48 فیصد افراد خوش تو 45 فیصد ناراض نظر آئے ۔ صوبو ں کی بنیاد پر دیکھا جائے تو وزیر اعظم کی تین سالہ کارکردگی سے سب سےزیادہ ناراض صوبہ پنجاب سے 50 فیصد افراد نظر آئے۔ جبکہ 42 فیصد نے کارکردگی کو اچھا کہا۔سندھ میں 49 فیصد کارکردگی سے خوش تو 45 ناراض نظر آئے۔اس کے برعکس بلوچستان میں 74 فیصد نے وزیراعظم عمران خان کی کارکردگی کو اچھا تو 26 فیصد نےبرا کہا۔جبکہ خیبر پختونخوا میں وزیر اعظم کی کارکردگی کو 62 فیصد نے سراہا تو 31 فیصد نے کارکردگی پر عدم اطمینان کا اظہار کیا۔ ن لیگ کی پچھلی حکومت سے موازنے کے سوال پر 37 فیصد نے پی ٹی آئی حکومت کی کارکردگی کو ن لیگ کی حکومت سے بہتر کہا۔ جبکہ 37فیصد نے اس کے برعکس رائےدی اور موجودہ حکومت کی کارکردگی کو پاکستان مسلم لیگ ن کی حکومتی کارکردگی سے بدترکہا۔ 18 فیصد نے دونوں حکومتوں کی کارکردگی کو ایک جیسی قرار دیا۔8فیصد نے اس سوال کا کوئی جواب نہیں دیا۔ سروے میں صوبائی حکومتوں کی کارکردگی کے سوال پرپنجاب میں بزدار حکومت کی کارکردگی کو 50فیصد افراد نے برا کہا۔ جبکہ43فیصد نے اچھا قرار دیا۔سندھ حکومت کی کارکردگی سے سروے میں 50فیصد افراد غیر مطمئن تو41 فیصد مطمئن نظر آئے۔اس کے برعکس بلوچستان حکومت کی کارکردگی کو 76فیصد نے اچھا تو 24فیصدنے برا کہا۔ خیبرپختونخوا کی صوبائی حکومت سے سروے میں 63فیصد افراد خوش تو 33 فیصد ناراض نظر آئے۔

Comments are closed.