چوہدری نثار حلف نہ اٹھا سکے ، مگر کیوں ؟

اسلام آباد (ویب ڈیسک) سابق وزیر داخلہ اور پاکستان مسلم لیگ نواز کے سینیئر رہنما چوہدری نثار علی خان کا کہنا ہے کہ وہ کسی سیاسی کھیل کا حصہ نہیں ہیں مگر آج انھیں بتایا گیا کہ سپیکر اور ڈپٹی سپیکر کی غیر موجودگی میں حلف نہیں لیا جا سکتا، جو بالکل غلط ہے

اور اس کے خلاف وہ قانونی چارہ جوئی کا ارادہ رکھتے ہیں۔یاد رہے کہ نثار علی خان کل پنجاب اسمبلی حلف اٹھانے کے لیے پہنچے تھے تاہم سپیکر اور ڈپٹی سپیکر پنجاب اسمبلی کی عدم موجودگی کے باعث اُن سے حلف نہیں لیا جا سکا۔اسمبلی کے باہر میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے نثار علی خان کا کہنا تھا کہ ’ایک ہفتے پہلے یہاں اسمبلی اور الیکشن کمیشن کو حلف کے بارے میں بتا دیا تھا۔ مگر آج کہا گیا کہ سپیکر اور ڈپٹی سپیکر کے بغیر حلف نہیں لیا جا سکتا ہے۔ یہ بالکل غلط ہے۔ چیئرمین کے پاس مکمل اختیارات ہوتے ہیں۔‘جب ان سے پوچھا گیا کہ تین برس بعد وہ حلف کیوں اٹھانا چاہ رہے ہیں تو اُن کا کہنا تھا کہ ’حکومت ایک خود ساختہ آرڈیننس لانے کی تیاری کر رہی ہے۔ یہ سب پاکستان کے آئین میں درج ہے۔ یہ ایک آرڈیننس لانے کی کوشش میں ہیں کہ جو ارکان مخصوص مدت کے دوران حلف نہ اٹھا پائیں انھیں نااہل قرار دیا جائے۔‘’اگر نااہلی قانون کے ذریعے ہو تو کوئی اعتراض نہیں ہے۔ لیکن اگر رات کے اندھیرے میں آرڈیننس لایا جائے تو پھر اعتراض ہو گا۔‘

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *