چھتری ہٹی نہیں تھوڑا سا کھسکی ہے ۔۔۔۔۔

کراچی (ویب ڈیسک)ن لیگ کے رہنما میاں جاوید لطیف نے کہا ہے کہ وزارت عظمیٰ کیلئے شہباز شریف کا انتخاب شاہد خاقان عباسی کی اپنی رائے ہے، آزادانہ انتخابات ہوئے تو نواز شریف وزیراعظم کیلئے امیدوار ہیں، دوسری صورت میں نواز شریف وزارت عظمیٰ کیلئے امیدوار کا فیصلہ کریں گے، پی ٹی آئی کے سر سے چھتری ہٹی نہیں

تھوڑی سرکی ہے۔ وہ نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں گفتگو کررہے تھے۔ پروگرام میں پیپلز پارٹی کے رہنما مصطفیٰ نواز کھوکھر اور وزیرمملکت برائے اطلاعات فرخ حبیب بھی شریک تھے۔مصطفیٰ نواز کھوکھرنے کہا کہ پی ٹی آئی حکومت غیرمقبول ہے تو اپوزیشن سے بھی عوام خوش نہیں ہیں، عوام اپوزیشن سے جس کردار کی توقع رکھتے ہیں ہم اس پر پورا نہیں اتر رہے، آصف زرداری کو یقیناً کوئی پیغام ملا ہوگا انہوں نے اپنا جواب سنادیا ہے۔فرخ حبیب نے کہا کہ خیبرپختونخوا میں شفاف بلدیاتی انتخابات کا کریڈٹ پی ٹی آئی کو جاتا ہے، بہت سے حلقوں میں پی ٹی آئی نے اپنے ہی ساتھ مقابلہ کیا، ایک امیدوار پارٹی ٹکٹ پر تھا تو دوسرا آزاد لڑرہا تھا، آصف زرداری کی تقریر منت سماجت کرنے والی بات ہے،ن لیگ کے رہنما میاں جاوید لطیف نے کہا کہ خیبرپختونخوا میں عوام نے پی ٹی آئی کو مسترد کردیا ہے، حکومت ہٹانے کا جمہوری طریقہ ہے غیر جمہوری طریقے کی حمایت نہیں کرتے، کسی حکومت کو بھیجنا دراصل 58/2Bکی ہی ایک شکل ہے، ماضی میں ن لیگ اور پی پی حکومتوں کو 58/2Bکے ذریعہ بھیجا جاتا رہا، آرٹیکل 62/63کے ذریعہ موجودہ حکومت کو بھیجنا بھی غلط ہے۔ میاں جاوید لطیف کا کہنا تھا کہ عمران خان رورہے ہیں کہ خراب مینجمنٹ اور امیدواروں کے غلط چناؤ کی وجہ سے کے پی میں ہارے ہیں، وزیراعظم بتائیں 2018ء میں مینجمنٹ اور امیدواروں کا چناؤ کون کرتا تھاجو آج آپ سے غلط ہوگیا، پی ٹی آئی کے سر سے چھتری ہٹی نہیں تھوڑی سرکی ہے۔جاوید لطیف نے کہا کہ عوام کے علاوہ کسی کو منتخب کرنے یا ہٹانے کا کوئی فارمولا پاکستان کے مفاد میں نہیں ہے،ہم یہ نہیں کہتے کہ لانے والے تحریک انصاف کو ہٹائیں ہم کہتے ہیں کہ لانے والے اپنی چھتری ہٹالیں، پارلیمنٹ میں بل منظور کروانے کیلئے بھی ارکان اسمبلی کو ہانک کر لایا جاتا ہے۔ جاوید لطیف کا کہنا تھا کہ آزادانہ انتخابات ہوئے تو نواز شریف وزیراعظم کیلئے ہمارے امیدوار ہیں، دوسری صورت میں نواز شریف پارٹی کے وزارت عظمیٰ کیلئے امیدوار کا فیصلہ کریں گے، وزارت عظمیٰ کیلئے شہباز شریف کا انتخاب شاہد خاقان عباسی کی اپنی رائے ہے، مولانا فضل الرحمٰن نے خیبرپختونخوا میں اچھی اپوزیشن کی تب ہی لوگوں نے ووٹ دیا

Comments are closed.