ڈاکٹر عبدالقدیر خان دراصل کس جگہ اور کس شہر میں اپنی تدفین کے خواہاں تھے ؟

اسلام آباد (ویب ڈیسک) محسن پاکستان اور نامو رایٹمی سائنسدان ڈاکٹر عبدالقدیر خان گزشتہ روز دنیا فانی سے رخصت ہوگئے اور ان کی تدفین ایچ 8 قبرستان میں کی گئی ، اب سینئر صحافی عمر چیمہ نے ایک افسر کے حوالے سے بتایاکہ “ڈاکٹر صاحب نے فیصل مسجد میں تدفین کی کبھی خواہش نہیں کی وہ

چاہتے تھے کہ انہیں کہوٹہ ریسرچ لیبارٹری کے احاطے میں دفن کیا جائے”۔ٹوئٹر پر عمر چیمہ نے لکھا کہ ” “ڈاکٹر صاحب چاہتے تھے کہ انہیں کہوٹہ ریسرچ لیبارٹری کے احاطے میں دفن کیا جائے تاہم اہل و عیال کو خدشہ تھا کہ شاید وہاں قبر پر جانے کی اتنی آسانی سے اجازت نہ ہو ، اس لئے وہ انکی H-8 قبرستان میں تدفین کے حامی تھے ڈاکٹرصاحب نے اتفاق کیا”۔انہوں نے اپنی بات جاری رکھتے ہوئے واضح کیا کہ ” درج بالا الفاظ ایک افسر کے ہیں جو 10 سال ڈاکٹر عبدالقدیر کی حفاظت کی ڈیوٹی کرتا رہا، اسکے بقول تدفین کا معاملہ پہلی دفعہ 2017 میں زیر بحث آیا جب ڈاکٹر صاحب ہسپتال داخل ہوئے تھے”۔

Comments are closed.