ڈی جی آئی ایس آئی لیفٹننٹ جنرل ندیم انجم کی تصاویر اور ویڈیوز منظر عام پر کیوں نہیں آتیں ؟

اسلام آباد (ویب ڈیسک )ڈی جی آئی ایس آئی لیفٹیننٹ جنرل ندیم انجم نے تمام اتھارٹیز کو ہدایت کی ہے کہ میٹنگ کے دوران بنائی گئی ان کی کوئی بھی تصویر یا ویڈیو میڈیا پر ریلیز نہ کرے ۔مقامی انگریزی اخبار دی نیوز نے اپنی رپورٹ میں دعویٰ کیاہے کہ ایک وفاقی وزیر نے بھی نام نہ لینے کی شرط پر

یہ بتایا ہے کہ حکومت بھی اسی وجہ کی بنیاد پر کوئی تصویر یا ویڈیو فوٹیج جاری نہیں کرتی ہے ۔پیر کے روز نیشنل سیکیورٹی کمیٹی کی میٹنگ ہوئی جس میں ڈی جی آئی ایس آئی بھی شریک تھے، حکومت کی جانب سے اس کمیٹی میٹنگ کی فوٹیج جاری کی گئی جس میں تقریبا تمام شخصیات دکھائی دے رہی تھیں سوائے لیفٹیننٹ جنرل ندیم انجم کے ۔جب وفاقی وزیر سے دریافت کرنے کی کوشش کی گئی کہ اس کی وجہ کیا ہے تو انہوں نے جواب دیا کہ یہ ڈی جی آئی ایس آئی کی جانب سے دی گئی تمام اتھارٹیز کو ہدایات ہیں ۔لیفٹننٹ جنرل ریٹائرڈ امجد شعیب نے اس پر اپنا تجزیہ پیش کرتے ہوئے کہا کہ انٹیلی جنس سروسز کا بنیادی اصول یہی ہے کہ میڈیا کی آنکھ سے دور رہا جائے ، انہوں نے کہا کہ ماضی میں اس کی کئی مرتبہ خلاف ورزی دیکھنے میں آتی رہی ، متعدد بار حکومت کی جانب سے انٹیلی جنس چیفس کی فوٹیج جاری کی جاتی رہی۔ امجد شعیب کا کہناتھا کہ انٹیلی جنس چیف کو ٹی وی اور میڈیا پر نہیں دکھایا جانا چاہیے ۔

Comments are closed.