کس صوبے میں حالات زیادہ خراب ہیں ؟

اسلام آباد (ویب ڈیسک) پاکستان میں 24 گھنٹے کے دوران کورونا وائرس کے باعث مزید 8 افراد جاں بحق ہوگئے۔نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی)کی جانب سے جاری اعدادوشمار کے مطابق 24 گھنٹے کے دوران پاکستان میں کورونا وائرس کے مزید 553 نئے کیسز رپورٹ ہوئے جس کے بعد

کورونا کے فعال کیسز کی تعداد 8 ہزار 884 ہوگئی ہے۔این سی اوسی کے مطابق ملک بھر میں اب تک کورونا سے متاثر ہونے والے افراد کی مجموعی تعداد 3 لاکھ 13 ہزار 984 ہوچکی ہے جب کہ 8 مزید اموات کے بعد کورونا سے مجموعی اموات کی تعداد 6 ہزار 507 ہوگئی ہے۔رپورٹ کے مطابق  24 گھنٹے کے دوران ہونے والی اموات میں سے 5 کا تعلق سندھ سے تھا جب کہ پنجاب،اسلام آباد اور آزاد کشمیر میں ایک، ایک مریض جاں بحق ہوا ہے۔دوسری جانب کورونا کے حوالے سے ضابطہ کار (ایس او پیز)کی خلاف ورزیوں  پر کراچی میں مزید 2 شادی ہالز اور 41 ریسٹورنٹس کو سیل کردیاگیا ہے۔شہر میں 3 روز کے دوران 9 شادی ہالز اور 159 ریسٹورنٹس سیل کیے جاچکے ہیں۔اس کے علاوہ انتظامیہ کی جانب سے ضابطہ کار کی خلاف ورزی پر 7 دکانوں، فیکٹریوں اور میڈیکل اسٹورز کو بھی سیل کیا جاچکا ہے جب کہ ایک لاکھ 30 ہزارروپے جرمانہ بھی عائد کیاجاچکا ہے وفاقی سرکاری تعلیمی اداروں میں کورونا کیسز میں اضافہ ہونے لگا۔ تعلیمی اداروں میں کورونا کے رینڈم ٹیسٹ کیے جارہے ہیں۔اسلام آباد میں کالج فار بوائز جی سکس تھری میں کورونا کے تین کیسز مثبت آگئے جن میں وائس پرنسپل اور دو اساتذہ شامل ہیں۔ ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر نے اسلام آباد کالج فار بوائز جی سکس تھری کو سیل کرنے کی سفارش کرتے ہوئے کہا کہ کم از کم پانچ روز کالج بند رکھا جائے، کمروں میں ڈس انفکیشن (جراثیم کش) اسپرے کیا جائے۔ اسلام آباد کے ہی ماڈل کالج فار گرلز ایف سیون فور

میں بھی تین پازیٹو کیسز آگئے جن میں  ایک آیا اور دو طلبا شامل ہیں۔ ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر نے گرلز کالج کو سیل بھی کرنے کی سفارش کر دی۔بلوچستان کے تعلیمی اداروں میں کرونا وائرس کے 5 نئے کیسز رپورٹ ہو نے  کے بعد تعلیمی اداروں سے سامنے آنے والے کوویڈ کیسز کی تعداد 550 ہوگئی ہے۔ محکمہ صحت بلوچستان کا کہنا ہے کہ بلوچستان کے تعلیمی اداروں میں کرونا وائرس کے 5 نئے کیسز رپورٹ ہوئے ہیں۔ محکمہ صحت کا کہنا ہے کہ تعلیمی اداروں میں کرونا وائرس کے مثبت کیسز کی تعداد 550 ہوگئی ہے۔شہر قائد میں نجی دفاتر میں بھی کورونا کے شکار مریضوں کی تعداد بڑھنے لگی، نجی بینک کی برانچ میں 5ملازمین میں کورونا وائرس کی تصدیق کے بعد برانچ غیر معینہ مدت کیلئے بند کرادی گئی،  ڈیفنس فیز5 میں نجی بینک کی برانچ کے5ملازمین میں کوروناکی تصدیق ہوگئی، جس کے بعد ڈپٹی کمشنر ضلع جنوبی نے نجی بینک کی برانچ غیرمعینہ مدت کیلئے بند کرا دی۔ ڈپٹی کمشنر ضلع جنوبی کا کہنا ہے کہ شہرمیں کورونا مثبت کی شرح میں مسلسل اضافہ ہورہاہے، نجی بینک برانچ کیدیگرملازمین کیبھی کورونا ٹیسٹ کیے جائیں گے۔ دوسری طرف خیبر میڈیکل کالج پشاور کے گرلز ہاسٹل میں 4 طالبات میں کورونا وائرس کی تصدیق کے بعد ہاسٹل بند کردیا گیا۔ترجمان خیبر ٹیچنگ ہسپتال (کے ٹی ایچ)کے مطابق کورونا وائرس سے متاثرہ طالبات کے رشتے داروں کو اطلاع دے دی گئی ہے۔ترجمان کے مطابق میڈیکل کالج کی طالبات کو کے ٹی ایچ کے پرائیویٹ رومز میں قرنطینہ کردیا گیا ہے،گرلز ہاسٹل کو 2 ہفتوں کے لیے بند کردیا گیا۔

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *