کس کو نیا وزیر خزانہ بنا دیا گیا ؟

اسلام آباد(ویب ڈیسک)وفاقی کابینہ میں ایک باراکھاڑپچھاڑ‘تحریک انصاف کی حکومت میں ایک مرتبہ پھر وزراء کے قلمدانوں میں تبدیلی کردی گئی اور تقریباً پونے 3 سال کے عرصے میں چوتھا وزیر خزانہ مقرر کیا گیا ہے۔وزیراعظم عمران خان نے وفاقی کابینہ میں رد و بدل کرتے ہوئے چوہدری فواد حسین کو وزارت اطلاعات و نشریات

جبکہ شوکت ترین کو وزارت خزانہ و ریونیو کاقلمدان سونپ دیا ہے۔ جمعہ کو جاری نوٹیفکیشن کے مطابق محمد حماد اظہر وفاقی وزیر برائے توانائی ، مخدوم خسروبختیار وفاقی وزیر صنعت و پیداوار اور سید شبلی فراز وفاقی وزیر برائے سائنس اینڈ ٹیکنالوجی ہوں گے جبکہ عمر ایوب خان کو وفاقی وزیربرائے اقتصادی امور کا قلمدان دیا گیا۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ وفاقی کابینہ میں تبدیلیاں کارکردگی بہتربنانے کیلئے کی گئی ہیں ‘ 6 مہینے میں شوکت ترین کو قومی اسمبلی یا سینیٹ کا رکن بننا ہوگا کیوں کہ وزیراعظم اپنے صوابدیدی اختیارات کے تحت کسی بھی شخص کو 6 ماہ کے لیے وزیر مقرر کرسکتے ہیں اور انہی اختیارات کے تحت شوکت ترین کو وزیر خزانہ کی ذمہ داریاں دی گئی ہیں لہٰذا مستقبل میں انہیں سینیٹر بنانے یا الیکشن لڑانے سے متعلق فیصلہ کیا جائے گا۔29 مارچ کو وزیر خزانہ بننے والے حماد اظہر سے صرف 18 روز بعد وزارت خزانہ کا قلمدان واپس لے لیا گیا اور انہیں وزیر توانائی بنایا گیا ہےجبکہ وزیر اطلاعات کا قلمدان ملنے کے بعد فواد چوہدری نے وزارت سائنس وٹیکنالوجی کا چارج چھوڑدیا ہے۔

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *