کشیدگی کا نتیجہ : بھارت نے اچانک چین کو حیران کن جھٹکا دے دیا

نئی دہلی (ویب ڈیسک) ھارت نے چین کے ساتھ جاری سرحدی کشیدگی کے بعد چینی کمپنیوں کے ساتھ کیے گئے ساٹھ کروڑ ڈالر سے زائد کے معاہدوں پر کام عارضی طور پر روک دیا ہے۔بھارتی ریاست مہاراشٹر کے وزیرِ صنعت سبھاش ڈیسائی کا کہنا ہے کہ وہ 3 چینی کمپنیوں کے ساتھ معاہدوں پر آگے بڑھنے کے لیے

مرکزی حکومت کی پالیسی کے منتظر ہیں۔چین اور بھارتی ریاست مہاراشٹر کے درمیان ابتدائی معاہدوں کا اعلان گزشتہ ہفتے کیا گیا تھا جس کا مقصد کورونا سے متاثرہ بھارتی معیشت کی بحالی میں مدد دینا تھا۔ان مین سب سے بڑا معاہدہ چین کی گاڑیاں بنانےوالی کمپنی گریٹ وال مورز کے ساتھ 50 کروڑ ڈالرز کی شراکت داری کا تھا۔اس کے علاوہ بھارتی الیکٹرک بس کمپنی کا 2 چینی کمپنیوں کے ساتھ مشترکہ منصوبہ بھی تھا۔

Sharing is caring!

Comments are closed.