یہ انوکھی مہم کس مقصد کے لیے شروع کی گئی ہے

کراچی (ویب ڈیسک) جنوبی افریقا کے وکٹ کیپر بیٹسمین کوئنٹن ڈی کاک نے معافی مانگ لی ۔ انہوں نے جنوبی افریقی کرکٹ بورڈ کے بلیک لائیوز میٹرز مہم سے اظہارِ یکجہتی کیلئے ایک گُھٹنے پر بیٹھنے کی ہدایت ماننے سے انکار کیا تھا او ر میچ سے ہی دستبردار ہوگئے تھے۔کرکٹ جنوبی افریقا

کے مطابق انہوں نے کہا کہ ’اگر میرے گُھٹنے ٹیکنے سے دوسروں کو تعلیم دینے میں مدد ملتی ہے، اور زندگیوں میں بہتری آتی ہے تو میں ایسا کرنے میں خوشی محسوس کروں گا۔ اس سارے عمل کو بہتر طریقے سے سمجھ پایا اور اپنے ملک کے لیے کرکٹ دوبارہ کھیلنا چاہتا ہوں ۔اپنے ساتھیوں اور مداحوں سے معذرت خواہ ہوں،کبھی اسے مسئلہ نہیں بنانا چاہتا تھا، نسل پرستی کے خلاف کھڑے ہونے کی اہمیت اور میں بطور کھلاڑی مثال قائم کرنے کی ذمہ داری کو سمجھتا ہوں۔ میں مساوات پر یقین رکھتا ہوں۔ جو مجھے نہیں جانتے، انہیں آگاہ کرنا چاہتا ہوں کہ میری سوتیلی بہنیں گوری اور سوتیلی ماں سیاہ نسل کی ہے، میرے نزدیک تمام لوگوں کے حقوق اور مساوات کسی بھی فرد سے زیادہ اہم ہیں۔ واقعے کے بعد مجھے بیوقوف، خود غرض اور نادان بولا گیا، یہ الفاظ مجھے نقصان نہیں پہنچاسکتے، لیکن غلط فہمی کی وجہ سے مجھے نسل پرست کہنے سے مجھے بہت تکلیف ہوتی ہے۔

Comments are closed.