یہ دراصل کون ہے ؟

کراچی(ویب ڈیسک) امریکی ریاست ٹینیسیی سے تعلق رکھنے والی خاتون نے جامعہ بنوریہ میں آکر اسلام قبول کرلیا۔42 سالہ عیسائی خاتون ٹیفنی سلسیٹ اسمتھ جامعہ بنوریہ عالمیہ میں آئیں اور اسلام قبول کرنے کی خواہش کا اظہار کیا۔جامعہ بنوریہ عالمیہ کے مہتمم مولانا نعمان نعیم نے نومسلمہ کو کلمہ پڑھا کر دائرہ اسلام میں داخل کیا

اور نومسلمہ کا عائشہ امینہ نام تجویز کرکے مبارکباد پیش کی۔اس موقع پر جامعہ بنوریہ عالمیہ کے نائب مہتمم مولانا فرحان نعیم اور جامعہ بنوریہ کے امریکن فاضل اور انسٹی ٹیوٹ آف نالج امریکا کے صدر نعمان شیخ سمیت دیگر علماء کرام بھی موجود تھے۔اس موقع پر گفتگوکرتے ہوئے مولانا نعمان نعیم نے کہاکہ اسلام دنیا کا واحد مذہب ہے جوشروع سے اپنی حقیقی شکل وصورت میں برقرارہے اورزندگی کے تمام شعبوں میں قیامت تک آنے والے انسانوں کی رہنمائی کرتاہے۔انہوں نے کہاکہ دنیابھراسلام اور مسلمانوں کیخلاف ہونے والے منفی پروپیگنڈوں کے باوجود آئے روزسینکڑوں غیرمسلم اسلام قبول کررہے ہیں، اسلام نے خاتون کو عزت وعظمت سے نوازا ہے آج دنیا میں خواتین حقوق سے محروم ہیں تو اسلام سے دوری کا نتیجہ ہے۔اس موقع پر نومسلمہ ٹیفنی سلسیٹ اسمتھ نے گفتگوکرتے ہوئے کہاکہ امریکا میں اپنی مسلمان سہیلوں سے متاثر ہوکر قرآن مجید کا مطالعہ کیا، اسلام نے خواتین کو سب سے زیادہ حقوق مہیا کیے ہیں۔ قرآن مجید کا مطالعہ کیا ہے اسی سے متاثر ہوئی اور ارادہ کیا اسلام قبول کرلوں اس لیے جامعہ بنوریہ عالمیہ آئی ہوں، اسلام قبول کرنے کے بعد خود کو خوش قسمت تصور کررہی ہوں۔

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *